نیپال، مسافر بس الٹنے سے 33افراد ہلاک، 28زخمی

نیپال، مسافر بس الٹنے سے 33افراد ہلاک، 28زخمی

کھٹمنڈو(آن لائن) نیپال کے پہاڑی سلسلے میں مسافروں سے بھری بس چڑھائی سے نیچے آگری، جس کے نتیجے میں کم سے کم 33 افراد ہلاک جبکہ 28 سے زائد زخمی ہوگئے، ہلاکتوں میں اضافہ کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔غیر ملکی خبررساں ادارے کی ایک رپورٹ کے مطابق متاثرہ بس کرتک دیوالی نامی گاؤں کی جانب جارہی تھی، جہاں سٹرک پہاڑوں کے درمیان انتہائی پیچیدہ اور بہت ہی تنگ راستوں سے گزرتی ہے۔نیپال کے وزارت داخلہ کے حکام کے مطابق حادثے میں 33 افراد ہلاک ہوئے ہیں لیکن متاثرین کا دعویٰ تھا کہ ہلاک ہونے والوں کی تعداد اس سے کہیں زیادہ ہے کیونکہ یہاں ڈھلان ہے اور اس جگہ پہنچنا انتہائی مشکل کام ہے۔حادثے کی متاثرہ ایک زخمی خاتون نے دوران علاج بتایا کہ پہاڑ کی چڑھائی پر جاتے ہوئے بس کا انجن بند ہوگیا تھا تاہم ڈرائیور نے اس کا انجن دوبارہ اسٹارٹ کرنے کی کوشش کی، اس دوران بس ڈھلان کی جانب جانے لگی اور سٹرک سے نیچے اتر کر الٹ گئی۔متاثرہ مسافر کا مزید کہنا تھا کہ بس کے اندر اور اْپر تقریبا 85 افراد سوار تھے، اس کے علاوہ بس پر چاول، گندم سمیت دیگر اشیاء کی بوریاں بھی لادی گئیں تھیں۔انھوں نے بتایا کہ جب بس کو حادثہ پیش آیا تھا تو اس میں رش اور سیٹ نہ ہونے کی وجہ سے چاول کی ایک بوری پر بیٹھی ہوئیں تھی۔ان کا مزید کہنا تھا کہ جب بس سٹرک سے نیچے اْتر کر الٹی تو اس دوران کئی افراد کی لاشیں اس سے نکل کر کھائی میں جاگریں۔واقعے میں زخمی ہونے والی ایک مسافر خاتون کا کہنا تھا کہ بس میں مسافروں کی تعداد اس کی گنجائش سے بہت زیادہ تھی۔حادثے کے فوری بعد پولیس اور فوج کے اہلکاروں نے موقع پر پہنچ کر ریسکیو کے کام کا آغاز کیا اور لاشوں اور زخمیوں کو ہسپتال منتقل کیا۔یاد رہے کہ ہر سال جون سے ستمبر کے دوران نیپال میں مون سون بارشوں کا موسم ہوتا ہے اور اس دوران ملک کے پہاڑی علاقوں میں ٹریفک حادثات کی تعداد بڑھ جاتی ہے۔

مزید : عالمی منظر


loading...