بوسٹن،ماہرین نے ازخود شفاف سے سیاہ ہونے والے شیشے تیار کر لئے

بوسٹن،ماہرین نے ازخود شفاف سے سیاہ ہونے والے شیشے تیار کر لئے
بوسٹن،ماہرین نے ازخود شفاف سے سیاہ ہونے والے شیشے تیار کر لئے

  


بوسٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) ماہرین نے ایک ایسا شیشہ دریافت کیا ہے جس پر بلائینڈ اور پردے لگانے کی ضرورت نہیں ہوگی اور صرف معمولی سی بجلی دوڑانے سے شیشہ دھندلا ہوکر اس طرح ہوجاتا ہے کہ اس کے آر پار روشنی نہیں گزرسکتی۔اگرچہ اس سے قبل یہ ٹیکنالوجی بوینگ 787 طیاروں کے شیشوں میں استعمال کی گئی تھی لیکن شیشوں کو بدلنے کے لیے بجلی درکار ہوتی تھی۔ اب میسا چیوسیٹس انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی(ایم آئی ٹی) میں ماہرین نے ایسا ہی ایک شیشہ تیار کیا ہے جو رنگ بدل کر دھندلا ہوجاتا ہے۔شیشے کے درمیان سینڈوچ کی طرح ایک الیکٹروکرومک مٹیریل رکھا کیا گیا ہے جو از خود شیڈ بدلتا ہے اور انہیں کھڑکیوں پر لگایا جاسکتا ہے۔ بوئنگ 787 ونڈوز میں لگائی گئی کھڑکیاں بجلی دوڑانے سے گہری رنگت اختیار کرلیتی ہیں لیکن اس میں کئی منٹ لگتے ہیں جب کہ شفاف کھڑکیاں صرف گہرے سبز رنگ کی ہوجاتی ہیں لیکن پردے کی طرح آر پار کے منظر کو مکمل طور پر نہیں روکتیں۔میساچوسیٹس کے ماہرین نے جو شیشہ بنایا ہے وہ فوری طور پر شفاف سے سیاہ ہوجاتا ہے اس کے لیے وہ سبز اور سرخ شیڈ کو ملاتا ہے جس سے شیشہ سیکنڈوں میں ایک دیوار کی طرح ہوجاتا ہے جس کے آرپار کچھ نظر نہیں آتا۔ اس شیشے کے درمیان میں 2عدد کیمیائی مرکبات، ایک نامیاتی مٹیریل اور دھاتی نمک رکھا گیا ہے۔ اس کا ملغوبہ مل کر بجلی دینے پرسیاہ رنگت اختیار کرلیتا ہے اس سے نہ صرف پردوں اور بلائنڈز( چلمن) سے نجات مل جائے گی بلکہ عمارتوں کی ایئرکنڈیشننگ کا خرچ بھی کم ہوجائے گا۔

مزید : صفحہ آخر


loading...