اسلحہ سکینڈل ،سابق آئی جی پی کی رہائی کی درخواست پر جواب طلب

اسلحہ سکینڈل ،سابق آئی جی پی کی رہائی کی درخواست پر جواب طلب

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس سید افسرشاہ اورجسٹس ابراہیم خان پرمشتمل دورکنی بنچ نے اسلحہ سکینڈل میں ملوث سابق آئی جی پی خیبرپختونخواملک نوید کی ضمانت پررہائی کی درخواست پرنیب خیبرپختونخوا سے پندرہ روزمیں جواب مانگ لیاہے جبکہ فاضل بنچ نے رٹ پٹیشن دوسرے بنچ کو منتقل کرتے ہوئے سماعت اگلی پیشی تک ملتوی کردی فاضل بنچ نے گذشتہ روز عبدالستارخان ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائررٹ کی سماعت کی اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذار کو دو سال قبل اسلحہ سکینڈل میں نیب خیبرپختونخوانے گرفتارکیاتھاتاہم اتنے عرصے میں ریفرنس میں صرف چند ہی گواہوں کے بیانات قلمبند ہوسکے ہیں جبکہ گواہوں کی تعداددو سو سے زائدہے اورابھی صرف تفتیشی افسر کابیان جزوی طورپرقلمبند کیاگیاہے جبکہ دوسری جانب درخواست گذار پرجو الزامات عائد کئے گئے تھے اس کے حوالے سے بھی کوئی ٹھوس شواہد سامنے نہیں آئے کیونکہ نیب نے خیبرپختونخواپولیس کو سپلائی کئے جانے والے اسلحہ کو غیرمعیاری قرار دیا تھا جبکہ اب تک کی تحقیقات کی روشنی میں ایسی کوئی بات سامنے نہیں آئی اوردرخواست گذارناکردہ جرم کی سزاکاٹ رہا ہے اس موقع پر فاضل بنچ نے نیب خیبرپختونخوا نے پندرہ روزمیں جواب مانگ لیا جبکہ جسٹس ابراہیم خان بحیثیت احتساب جج اس کیس میں متعددفیصلے جاری کرچکے ہیں اس بناء فاضل بنچ نے نے رٹ پٹیشن دوسری بنچ کو ارسال کردی ۔

مزید : کراچی صفحہ اول