چارسدہ میں 10 لاکھ 60 ہزار تاوان کیلئے مغوی تاجر بازیاب

چارسدہ میں 10 لاکھ 60 ہزار تاوان کیلئے مغوی تاجر بازیاب

چارسدہ (بیورورپورٹ) شہر کے بھر ے بازار سے گن پوائنٹ پر اغواء ہونے والا تاجر 10لاکھ 60ہزار روپے تاوان کے عوض سخا کوٹ سے بازیاب ۔ اغواء کے الزام میں گرفتار ملزم نے واقعہ سے لاعلمی ظاہر کرکے واردات کو ایس ایچ او اور تاجر کا گٹھ جوڑ قرار دیا ۔ ناکردہ گناہ کے الزام میں غلط ایف آئی آر کے اندراج پر ایس ایچ او اور تاجر کے خلاف قانونی کاروائی کرونگا۔ اغواء میں ملوث ثابت ہوا تو اسی وقت 42لاکھ روپے جرمانہ ادا کرونگا ۔متاثرہ خاندان کے پانچ افراد کو خانہ کعبہ لے جاکر ان کی تسلی کو بھی تیار ہوں ۔ نامزد ملزم قیصر جمال ۔ تفصیلات کے مطابق 10اگست کو چارسدہ شہرکے بھرے بازار سے اغواء ہونے والا تاجر سراج 10لاکھ 60ہزار روپے تاوان کے عوض سخاکوٹ سے بازیاب کئے گئے ۔ متحدہ شاپ کیپرز فیڈریشن کے مرکزی صدر حکیم اللہ فوجی پر مشتمل وفد سے بات چیت کر تے ہوئے بازیاب ہونے والے تاجر نے بتایا کہ ملزم قیصر جمال اور ان کے ساتھیوں نے مردان روڈ سے گن پوائنٹ پر ان کو زبر دستی گاڑی میں ڈالا اور ناک پر کپڑا رکھ کر بے ہوش کر دیا۔ بازیاب تاجر کے بھائی غفور خان کے مطابق مغوی کے بازیابی کیلئے دس لاکھ ساٹھ ہزار روپے تاوان ادا کیا گیا اور گزشتہ رات رقم کی ادائیگی کے بعد مغوی کو رہا کر دیا گیا ۔ دوسری طرف اغواء کے الزام میں گرفتار عوامی نیشنل پارٹی کے رہنماء قیصر جمال ہشنغرے نے میڈیا کو بتایا کہ ایس ایچ او تھانہ سٹی عمران خان نے ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت تحریک انصاف لیبر ونگ کے صدر سراج سے ساز باز کی اور سراج کو گھر بٹھا کر اغواء کا ڈراما رچا میرے خلاف اغواء کا مقدمہ درج کیا ۔ انہوں نے کہاکہ رات 9بجے اغواء کی رپورٹ درج ہو ئی اور رات دس بجے سے پہلے پولیس میرے حجرے میں موجود تھی جنہوں نے مجھے ناکردہ گناہ کے پاداش میں گرفتار کرکے دو دن تک تھانے میں ذہنی طور پر ٹارچر کرایا ۔ انہوں نے کہاکہ ایس ایچ او عمران خان نے پولیس رولز سے ہٹ کر 156ضمن 3دریافت کی بجائے میر ے خلاف براہ راست اغواء کی ایف آئی آر درج کی جو قانون اور شہری حقوق کے سراسر خلاف ہے ۔ انہوں نے مزید کہاکہ ان کو تاجر سراج کے اغواء میں صلاح کار یا براہ راست ملوث ثابت کیا گیا تو اسی وقت 42لاکھ روپے جرمانہ ادا کرونگا جبکہ متاثرہ تاجر سمیت ان کے خاندان کے پانچ افراد کو خانہ کعبہ لے جانے کو بھی تیار ہو ں تاکہ خانہ کعبہ پر ہاتھ رکھ کر ان کی تسلی ہو جائے ۔ انہوں نے کہاکہ عدالت کے حکم پر جس دن مجھے جیل بھیجا گیا اسی دن مغوی تاجر بھی بازیاب ہو گیا جو ایک سوالیہ نشانہ ہے ۔انہوں نے واضح کیا کہ عدالت میں اپنے اوپر لگائے گئے الزام کا بھر پور دفاع کرونگا اور رہائی کے اپنی بے عزتی اور جھوٹی ایف آئی آر کے اندراج کے خلاف ایس ایچ او عمران خان ا و اور تاجر سراج کے خلاف بھر پور قانونی کاروائی کرونگا ۔

مزید : کراچی صفحہ اول