عبدالحکیم ‘ بچوں کے اغوا کی کوشش کی افواہ شہریوں کی برقع پوش عورت کو مارنے کی کوشش پولیس کی مداخلت پر معاملہ رفع دفع

عبدالحکیم ‘ بچوں کے اغوا کی کوشش کی افواہ شہریوں کی برقع پوش عورت کو مارنے کی ...

عبدالحکیم (نمائندہ خصوصی ) برقع پوش عورت کی جانب سے بچوں کو اغواء کرنے کی کوشش کے حوالے سے افواہ سینکڑوں کی تعداد (بقیہ نمبر18صفحہ12پر )

میں لوگ ریلوے لائن کے پاس پہنچ گئے لوگ ابھی اینٹو ں اور روڑوں کو اکٹھا کر کے اس عورت کو مارنا چاہتے تھے کہ تھانہ عبدالحکیم کے انچارج چوہدری عبدالطیہف موقع پر پہنچ گئے تو چوہدری عبدالطیف نے برقع پوش عورت کو زبردستی سرکای گاڑی میں ڈالہ اور تیزی سے تھانے کی جانب چلے گئے مجمع نے بھی سرکاری گاڑی کا تعاقب جاری رکھا، تھانہ کا دروازہ بند کر دیا لوگ دیواروں پر چڑ ھ گئے اور شور مچانا شروع کر دیا کہ برقع پوش عورت کو ہمارے حوالے کرو ،لیڈی پولیس نے برقع پوش عورت کی تلاشی لی تو اسکی جیب سے دس روپے اور تسبح نکلی مذکور برقعہ پوش عورت نے بتایا کہ وہ محلہ عید گاہ کی رہائشی ہے اور وہ معزز فیملی سے تعلق رکھتی ہے چوہدری دلشاد نے برقع پوش عورت کے لواحقین کو اطلاع دی وہ بھی موقع پر پہنچ گئے برقع پوش عورت نے بتایا کہ اس کا بیٹا ایک دوکان پر ملازم ہے اس ک فون آیا کہ اس کو کچھ تکلیف ہے اور سانس بند ہو رہی ہے گھر میں اس وقت کوئی مرد موجود نہیں تھا ، اس لڑکے خضر کی ماں ممتا سے مجبور ہو کر اپنے بیٹے کا پتہ کرنے کے لئے گھر سے چل پڑی جبکہ اس کو یہ پتہ نہی تھا کی اسکا بیٹا پھاٹک کے پاس کہان کام کرتا ہے اسنے ایک بوڑھی عورت سے دوکان کے بارے پوچھنا چاہا ، برقع پوش عور ت لوکل زبان بولتی ہے جبکہ دوسر ی عورت جس سے اس نے راستہ پوچھنے کی کوشش کی وہ اردو اسپکینگ تھی اسکو اسکی بات سمجھ نہ آئی اور اور اسنے شور مچا دیا کہ برقع پوش عورت نے مجھ پر حملہ کرنے کی کوشش کی، اسی غلط فہمی کی وجہ سے لوگوں نے برقع پوش عورت کو جان سے مارنے کی کوشش کی جوکہ پولیس کی بروقت مداخلت سے بچ گئی بعد ازان پولیس نے سب سے تحریری بیانات لیکر انکو پولیس کی حفاظت میں بھیج دیا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...