چارسدہ ،دریائے سوات پر تعمیر شدہ سائیڈ وال دریا برد

چارسدہ ،دریائے سوات پر تعمیر شدہ سائیڈ وال دریا برد

چارسدہ (بیورورپورٹ)شولگرہ میں دریائے سوات کے کنارے نو تعمیر شدہ سائیڈ وال ٹھیکدار کی غفلت اور لاپر واہی کی وجہ سے دریا برد ہو گیا ۔ کھڑی فصلیں تباہ ہو گئی ۔ اہلیان علاقہ کا صوبائی وزیر آبپاشی سکند ر شیر پاؤ سے 250فٹ مضبوط سائیڈ وال دوبارہ بنانے کا مطالبہ ۔ تفصیلات کے مطابق حلقہ پی کے 19موضع بابکری ،موضع قلفی کورونہ ، موضع خٹ کورونہ بالا، خٹ بالا ، خٹ کورونہ پایاں نے صوبائی وزیر آبپاشی سکندر حیات خان شیر پاؤ سے مطالبہ کیا ہے دریائے سوات کے کنارے موضع بابکری میں 1200فٹ سائیڈ وال کی ناقص تعمیر کے خلاف متعلقہ ٹھیکدار اور ذمہ حکام کے خلاف ایکشن لیا جائے ۔ میڈیا سے بات چیت کر تے ہوئے دلاور شاہ او ر دیگر نے کہاکہ اہل علاقہ کے مطالبہ کے باوجود ایس ڈی او نے سائیڈ وال میں پتھر نہیں لگائے جس کی وجہ سے 250فٹ زمین اور سائیڈ وال دریا برد ہو گیا جس کی وجہ سے کھڑی فصلیں تباہ ہو گئیں۔ انہوں نے صوبائی وزیر آبپاشی سے مطالبہ کیا کہ ہنگامی بنیادوں پر زمین کی پختگی اور مضبوط سائیڈ وال کی تعمیر یقینی بنا دیں جبکہ ساتھ ساتھ دریا کے کنارے دیگر خطرناک مقامات کو بھی پختہ کریں ورنہ مستقبل قریب میں تمام زر خیز زمینیں دریا بر د ہو جائینگی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر