چارسدہ ،ضلع کونسل کا بجٹ ملی بھگت سے منظور کیا گیا ،مولانا ہاشم

چارسدہ ،ضلع کونسل کا بجٹ ملی بھگت سے منظور کیا گیا ،مولانا ہاشم

چارسدہ (بیورورپورٹ)جمعیت علمائے اسلام کے ضلعی امیر مولانا محمد ہاشم خان نے کہا ہے کہ ضلع کونسل کے بجٹ اجلاس میں اے این پی کے بعض ارکان بک گئے جس کی وجہ سے بجٹ پا س ہو ا۔ ضلعی نائب ناظم اعلی کی طرف سے رجڑ میں سوئی گیس کے مسائل حل کرنے کے حوالے دعوے جھوٹ کا پلندہ ہے۔ پیر اشفاق کو پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزی اور صوبائی قیادت کے خلاف منفی بیان بازی پر پارٹی سے نکالا گیا ہے ۔ وہ میڈ یا سے بات چیت کر رہے تھے ۔ اس موقع پر تحصیل نائب ناظم ڈاکٹر الطا احمد اور ضلعی ترجمان عطاء اللہ بھی موجود تھے ۔ مولانا محمد ہاشم خان نے اے این پی پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اے این پی کی قیادت جے یو آئی کے درویش علمائے کرام کے خلاف مسلسل زہر افشانی کر رہے ہیں مگر ضلع کونسل کے بجٹ اجلاس میں ان کے ارکان بعض ارکان بک گئے جس کی وجہ سے ضلع کونسل کا بجٹ پاس کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ ضلعی نائب ناظم مصور شاہ کی طرف سے رجڑ میں سوئی گیس کے کم پریشر اور سوئی گیس کے دیگر مسائل حل کرنے کے دعوے جھوٹ کا پلندہ ہے ۔ محکمہ سوئی گیس وفاقی محکمہ ہے جس سے ضلع کونسل کے ممبران کا کوئی تعلق نہیں ۔ رجڑ سمیت دیگر علاقوں میں سوئی گیس کے کم پریشر کا مسئلہ حل کرنے کیلئے جے یوآئی کے رکن قومی اسمبلی مولانا سید گوہر شاہ نے حال ہی میں دو کروڑ روپے کا بجٹ منظور کیا ہے جس سے سوئی گیس کے مسائل حل ہو رہے ہیں۔ جے یو آئی کے سابق رہنماء پیر اشفاق کی تحریک انصاف میں شمولیت کے حوالے سے انہوں نے کہاکہ پیر اشفاق کو بلدیاتی الیکشن میں پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزی اور صوبائی قیادت کے خلاف بیان بازی پر عہدے سے ہٹایا گیا تھا جبکہ پارٹی قیادت کی طرف سے پیر اشفا ق پر جرگہ بھی کیا گیا تھا کہ وہ دوسری پارٹی میں شمولیت اختیار نہ کریں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر