ڈاکٹرعاصم کے خلاف کرپشن کیس کی سماعت22اگست تک ملتوی

ڈاکٹرعاصم کے خلاف کرپشن کیس کی سماعت22اگست تک ملتوی

کراچی (اسٹاف رپورٹر)کراچی کی احتساب عدالت میں ڈاکٹر عاصم کے خلاف 462 ارب روپے کی کرپشن کیس کی سماعت ہوئی۔ عدالت میں ڈاکٹر عاصم سمیت ملزمان اطہر حسین، اعجاز چوہدری سمیت دیگر پیش ہوئے۔ سماعت کے دوران عدالت میں جناح پوسٹ گریجویٹ کے ڈائریکٹر ڈاکٹر انیس بھٹی کا کہناتھا کہ جناح اسپتال میں ہائیڈرو گرافی کی سہولت موجود نہیں ہے جس پر عدالت کا کہناتھا کہ اتنا بڑا اسپتال ہے اور ا س میں یہ سہولت نہیں ہے ۔ عدالت کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر عاصم کا علاج جاری رکھا جائے اور تھراپی کرائی جائے اور ان کو آغاخان اسپتال چیک اپ کیلئے لے جایا جائے جس پر ڈاکٹر انیس بھٹی کا کہناتھا کہ ہم نہیں لے جاسکتے آپ جیل حکام کو حکم دیں وہ لے کر جائیں گے ۔ دوران سماعت ڈاکٹر عاصم کے وکلا نے کہا کہ نیب کی جانب سے ابھی تک تمام دستاویزات فراہم نہیں کی گئی ہیں جس پر عدالت کا بھی نیب حکام کو حکم دیا کہ وکلا جن دستاویزات کی نشاندہی کررہے ہیں وہ پوری کی جائیں۔ عدالت میں نیب کی جانب سے کہناتھا کہ آئندہ سماعت پر وہ دستاویزات پیش کرد جائیں گی ۔ عدالت نے جے پی ایم سی کے ڈائریکٹر ڈاکٹر انیس بھٹی کو حکم دیا کہ ڈاکٹر عاصم کی فزیو تھراپی جاری رکھی جائے اور آئندہ سماعت پر ڈاکٹر عاصم کی صحت سے متعلق رپورٹ بھی پیش کی جائے ۔ عدالت نے سماعت 22 اگست تک ملتوی کردی ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول