اب گاڑیاں ٹریفک سگنل سے باتیں کریں گی، کیسے؟ آپ بھی جانئے

اب گاڑیاں ٹریفک سگنل سے باتیں کریں گی، کیسے؟ آپ بھی جانئے
اب گاڑیاں ٹریفک سگنل سے باتیں کریں گی، کیسے؟ آپ بھی جانئے

  


نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک)گاڑیاں بنانے والی کمپنی اوڈی نے اعلان کیا ہے کہ وہ ایک ایسی ٹیکنالوجی متعارف کروانے والی ہے جس کی بدولت اس کی گاڑیاں ٹریفک سگنلز سے بات چیت کر سکیں گی۔یہ ٹیکنالوجی ڈرائیوروں کو بتائے گی کہ کب لائٹ سبز ہونے والی ہے اور کب سرخ لائٹ پر انھیں رکنا ہے۔کمپنی کا کہنا ہے اس کا مقصد حفاظت سے زیادہ ڈرائیونگ کے وقت دباو¿ میں کمی لانا ہے۔

کمپنی امریکہ کے پانچ سے سات شہروں میں اس کو اس سال عملی جامہ پہنچانے کا ارادہ رکھتی ہے تاہم یہ واضح نہیں کیا گیا ہے ان سے پہلے کس پر عمل کیا جائے گا۔اوڈی کمپنی کے مطابق ’وہیکل ٹو انفراسٹرکچر‘ یا ’وی ٹو آئی‘ ٹیکنالوجی یکم جون کے بعد تیار کیے جانے والے اے 4 ماڈلز میں رواں سال یکم جون سے متعارف کروائے جا چکے اور آئند سال کیو 7 ماڈلز میں متعارف کروائے جائیں گے۔ووکس ویگن بنانے والی اس کمپنی کا کہنا ہے کہ حفاظت سے متعلق اور دیگر آپریشنل معلومات وائرلس کی مدد سے ٹریفک سگنلز اور گاڑیوں میں منتقل کی جائیں گی۔ اگرچہ امید ظاہر کی جارہی ہے اس ٹیکنالوجی کی مدد سے حادثات اور سڑکوں پر رش میں کمی لائی جا سکے گی تاہم اوڈی کے ایک جنرل مینیجر پوم ملہوترا نے صحافیوں کو بتایا کہ ’یہ ایک سیفٹی فیچر نہیں ہے۔ یہ ایک آرام اور سہولت فراہم کرنے والا فیچر ہے۔‘پوم ملہوترا کا کہنا ہے کہ اوڈی کا یہ نظام لائٹ سرخ سے سبز ہونے سے پہلے گاڑی میں الٹی گنتی دکھائے گی۔

الٹی گنتی کے ذریعے ڈرائیوروں کو یہ بھی بتایا جائے گا کہ لائٹ سرخ ہونے والی ہے اور آپ کے پہنچنے تک لائٹ سرخ ہوجائے گی، چنانچہ ڈرائیور کو اشارہ ملے گا کہ وہ بریک لگانا شروع کر دے۔خبررساں ادارے روئٹرز کے مطابق مستقبل میں اس ٹیکنالوجی کو گاڑی کے نیویگیشن کے نظام یا اس کے چلنے یا رکنے کے عمل کے ساتھ جوڑ کر دیکھا جارہا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...