پاکستانی ہیکر نے گوگل کروم اور موزیلا فائر فوکس میں ” بگ “ ڈھونڈ کر 5 ہزار ڈالر انعام اپنے نام کر لیا

پاکستانی ہیکر نے گوگل کروم اور موزیلا فائر فوکس میں ” بگ “ ڈھونڈ کر 5 ہزار ...
پاکستانی ہیکر نے گوگل کروم اور موزیلا فائر فوکس میں ” بگ “ ڈھونڈ کر 5 ہزار ڈالر انعام اپنے نام کر لیا

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستانی ایتھیکل ہیکر نے انٹر نیٹ براؤزر گوگل کروم اور موزیلا فائر فوکس میں غلط نتائج کا سبب بننے والا ” بگ “ ڈھونڈ کر 5 ہزار ڈالر کا انعام اپنے نام کر لیا ہے۔

ڈیلی پاکستان گلوبل کے مطابق پاکستانی نوجوان رافع بلوچ نے صارفین کو ہیکرز کی گرفت میں پہنچانے والا بگ ڈھونڈ کر انعام اپنے نام کیا ہے۔ یہ ایسے ہی ہے کہ ایک ہیکر گوگل کروم یا موزیلا فائر فوکس پر بگ اپ لوڈ کردے جس کے بعد ایک صارف فیس بک کی ویب سائٹ سرچ کرتا ہے ۔ بگ کی وجہ سے صارف کو فیس بک کی ویب سائٹ ہی نظر آئے گی لیکن وہ جیسے ہی اس میں ”لوگ ان “ کرے گا تو وہ خود بخود ہیکر کی ویب سائٹ پر پہنچ کر اپنی پرائیویسی سے محروم ہو کر اپنا ڈیٹا کھودے گا۔

پاکستانیوں کیلئے بڑی خوشخبری آگئی، 30 ایم بی فی سیکنڈ ڈاﺅن لوڈ کے ساتھ تیز ترین انٹرنیٹ اب صرف 4ہزار روپے ماہانہ میں!

واضح رہے کہ انٹرنیٹ صارفین کا 75 فیصد حصہ موزیلا فائر فوکس اور گوگل کروم استعمال کرتا ہے اور اس ”بگ“ کی وجہ سے دنیا بھر کے کروڑوں صارفین ہیکرز کے رحم و کرم پر تھے۔

وائر س کس وقت زیادہ خطرناک ہوتے ہیں؟سائنس دانوں نے پتہ چلالیا

رافع بلوچ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ” بگ“ ملنے کے بعد گوگل کروم اور موزیلا فائر فوکس بہت جلد اس مسئلے کو حل کرلیں گے ۔ یہ بگ بہت سے دیگر براؤزرز میں بھی پایا جاتا ہے لیکن حفاظتی نکتہ نظر کے تحت وہ ان کمپنیوں کے نام نہیں لینا چاہتے۔

کیا آپ کو سوشل نیٹ ورک Orkut یاد ہے؟ اب یہ واپس آرہا ہے لیکن انتہائی منفرد شکل میں، فیس بک کیلئے خطرے کی گھنٹی بج گئی

یاد رہے کہ رافع بلوچ انٹرنیٹ سکیورٹی کے ایکسپرٹ اور بگ رپورٹر ہیں۔ وہ بگ پکڑنے کے حوالے سے قائم سوسائٹی کا حصہ ہیں جبکہ انہیں گوگل، فیس بک، مائیکروسوفٹ، ٹوئٹر اور دیگر متعدد ویب سائٹس نے اپنے ہال آف فیم میں بھی شامل کر رکھا ہے۔

مزید : سائنس اور ٹیکنالوجی