ٹیکس دہند گان کی تعداد 4برسوں کے دوران 12لاکھ سے تجاوز کرگئی

ٹیکس دہند گان کی تعداد 4برسوں کے دوران 12لاکھ سے تجاوز کرگئی

اسلام آباد (آن لائن)حکومت کی جانب سے ٹیکس نیٹ کو وسعت دینے کی پالیسی اور اقدامات کے نتیجے میں ٹیکس دہندگان کی تعداد بڑھ کر 12 لاکھ 16ہزار 614 ہوگئی۔ گزشتہ چار سال میں ٹیکس ادا کرنے والوں میں تقریبا 50 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کے اعدادوشمار کے مطابق 2013 میں میں ملک میں ٹیکس دہندگان کی کل تعداد 7 لاکھ 69 ہزار892 تھی جو ٹیکس سال 2016 میں بڑھ کر12 لاکھ 16 ہزار 614 تک پہنچ گئی ہے۔اس طرح موجودہ حکومت چار سالوں کے دوران ٹیکس ادا کرنے والوں میں تقریبا 50 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ وفاقی حکومت نے ٹیکس دہندگان کے لئے سہولیات دینے کے ساتھ ساتھ نادہندگان کے لئے کاروبار کو مشکل اور مہنگا بنانے کے لئے بھی مختلف اقدامات کئے ہیں۔ ٹیکس کلچر کو فروغ دینے کے سلسلے میں لوگوں کی حوصلہ افزائی کے لئے موجودہ حکومت نے مسلسل چار سال سے ٹیکس ڈائریکٹریز بھی شائع کی ہیں۔اس طرح پاکستان دنیا کا چوتھا ملک ہے جس نے باقاعدہ ٹیکس ڈائریکٹر ی شائع کی ہے۔ مسلم لیگ ن کی حکومت نے جنرل ٹیکس ڈائریکٹری کے ساتھ ساتھ ارکان پارلیمنٹ کی ٹیکس ڈائریکٹری شائع کرنے کی روایت بھی قائم کی ہے۔ٹیکس ڈائریکٹر ی شائع کرنے جیسے اقدامات کا مقصد ٹیکس نیٹ کو بڑھانا ، ٹیکس کلچر اور شفافیت کا فروغ ہے۔ اس کے علاوہ کاروبار دوست پالیسیوں اور خوف و ہراس کے بغیر محاصل میں اضافہ کرنا حکومت کی ترجیح ہے۔ 2013 میں ٹیکس محاصل کا حجم 1946 ارب روپے تھاجو گزشتہ چار سال میں بڑھ کر3362ارب روپے ہوگیا ہے۔

اس سلسلے میں ٹیکس نیٹ میں اضافہ، بڑے طبقے کو حاصل مراعات واستثنی ختم کرنے سمیت کئی دوسرے مشکل فیصلے کئے گئے ہیں۔

مزید : کامرس