کیا آپ کو معلوم ہے کہ کچھ سوئچز میں تین ٹانگیں کیوں ہوتی ہیں؟ جان کر آپ اگلی بار صرف یہی پلگ خریدیں گے

کیا آپ کو معلوم ہے کہ کچھ سوئچز میں تین ٹانگیں کیوں ہوتی ہیں؟ جان کر آپ اگلی ...
کیا آپ کو معلوم ہے کہ کچھ سوئچز میں تین ٹانگیں کیوں ہوتی ہیں؟ جان کر آپ اگلی بار صرف یہی پلگ خریدیں گے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نیویارک(نیوزڈیسک) آپ نے اکثر دیکھا ہوگا کہ بجلی کے سوئچ میں دو ٹانگیں ہوتی ہیں اور اس کی وجہ انتہائی سادہ ہے یعنی گرم (کرنٹ)تار اور ٹھنڈی(نیوٹرل)تار۔جب سوئچ لگایا جاتا ہے تو گرم تار اور ٹھنڈی تار کی وجہ سے سرکٹ مکمل ہوتا ہے اور چیز بجلی کی وجہ سے چلنے لگتی ہے لیکن اگران میں سے ایک بھی تار نکل جائے تو سرکٹ بریک ہوجاتا ہے اور مذکورہ چیز بھی آف ہوجاتی ہے۔یہاں تک تو بات سمجھ آتی ہے لیکن کچھ سوئچز ایسے بھی ہوتے ہیں جن میں تین ٹانگیں ہوتی ہیں۔آخر یہ تیسری تار یا ٹانگ کس مقصد کے لئے لگائی جاتی ہے تو اس کا جواب بھی انتہائی آسان ہے۔اگر دوتاروں کی وموجودگی میں ہمیں بجلی کا جھٹکا لگے تو سرکٹ مکمل ہونے کی وجہ سے یہ جھٹکا اس قدر شدید ہوتا ہے کہ ہماری جان بھی جاسکتی ہے اور اسی طرح اگر مین تار سے آنے والی بجلی کی تاروں کی سپلائی میں کسی بھی وجہ سے بہت زیادہ بجلی آجائے گھر میں موجود تمام اشیاءجل بھی سکتی ہیں اور گھر کوآگ لگنے کا خطربھی ہوسکتا ہے لہذا اس خطرے کو دور کرنے کے لئے ایک ارتھ کی تار بھی رکھی جاتی ہے جو کہ زمین کے اندر جاتی ہے۔کرنٹ زیادہ آنے کی صورت میں یہ تار اپنا کام کرتی ہے اور زائد بجلی کو زمین میں لے جاکر گھر اور اشیاءکو جلنے سے بچاتی ہے۔اگر ہمیں کرنٹ بھی لگ جائے تو یہ تار اپنا کام کرتے ہوئے جھٹکے کے اثر کو زائل کرتی ہے اور انسان کی زندگی محفوظ رہتی ہے۔امید ہے کہ یہ تمام باتیں جان کر اگلی بار جب آپ سوئچ خریدیں گے تو یہ باتیں مدنظر رکھیں گے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس