پاکستان سپرلیگ اسپاٹ فکسرز کو دوسروں کیلئے مثال بنانے کا فیصلہ

پاکستان سپرلیگ اسپاٹ فکسرز کو دوسروں کیلئے مثال بنانے کا فیصلہ

لاہور(سپورٹس رپورٹر)پاکستان کر کٹ بورڈ نے ملکی کرکٹ سے اسپاٹ فکسنگ کو ختم کرنے کے لئے پی ایس ایل اسپاٹ فکسنگ میں مبینہ ملوث کھلاڑیوں کو سخت سے سخت سزا دینے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ اسے دیگر کرکٹرز کیلئے مثال بنادیا جائے۔بورڈ کے چیئرمین نجم سیٹھی نے کہا ہے کہ کھلاڑی فیصلے کیخلاف عدالت میں اپیل بھی نہیں کرسکیں گے، نوجوانوں کھلاڑیوں کو فکسنگ سے بچانے کیلئے خصوصی ٹریننگ دی جارہی ہے اور کھلاڑیوں کو اس حوالے لیکچرز بھی دیے جارہے ہیں۔ذرائع نے بتایا کہ پی ایس ایل اسپاٹ فکسنگ میں مبینہ طور پر ملوث شرجیل خان ، خالد لطیف ، شاہ زیب حسن کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ آئندہ ماہ پی ایس ایل اسپاٹ فکسنگ کیس کا فیصلہ متوقع ہے جس میں ملوث کھلاڑیوں کو تاحیات پابندی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے ۔اسپاٹ فکسنگ میں ملوث کھلاڑیوں کی تحقیقات کرنیوالا ٹریبونل ایسا فیصلہ دے گا جس کے بعد کھلاڑی عدالت سے اپیل نہیں کرسکیں گے ۔انہوں نے کہا کہ مستقبل میں اگر کوئی بھی کھلاڑی اسپاٹ فکسنگ میں ملوث پایا گیا تو اسے سخت سزا دی جائے گی تاکہ کوئی بھی کھلاڑی آئندہ میچ فکسنگ کا تصور بھی نہ کرسکے ۔انہوں نے بتایاکہ نوجوانوں کھلاڑیوں کو فکسنگ سے بچانے کیلئے خصوصی ٹریننگ دی جارہی ہے اور کھلاڑیوں کو اس حوالے لیکچرز بھی دیے جارہے ہیں۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی