ہیڈ کوچ نے گالیاں دیں : عمر اکمل ، صرف ڈانٹا : مکی آرتھر

ہیڈ کوچ نے گالیاں دیں : عمر اکمل ، صرف ڈانٹا : مکی آرتھر
 ہیڈ کوچ نے گالیاں دیں : عمر اکمل ، صرف ڈانٹا : مکی آرتھر

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(سپورٹس ڈیسک )قومی ٹیم کے کھلاڑی عمرا کمل پھٹ پڑے ،ان کا کہناہے کہ گزشتہ روز جب میں ہیڈ کو چ مکی آرتھر کے پا س اکیڈمی میں گیا تو انہوں نے مجھے ڈانٹا اور گالیاں دیں ،جب وہ گالیاں دے رہے تھے تو انضمام بھائی بھی سامنے بیٹھے تھے ،انہوں نے بھی انہیں نہیں روکا۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کامران اکمل کا کہناتھا کہ میں یہ پی سی بی کو بتانا چاہتاہوں کہ ہمارے ساتھ کیا سلوک ہو رہاہے ،ہیڈ کو چ مجھ سمیت دیگر کھلاڑیوں کو بھی گالیاں دیتاہے ،مجھ سے گالیاں برداشت نہیں ہوئیں ،کچھ دیر کیلئے میری فٹنس خراب رہی اب میں بہتر کرنے کی کوشش کر رہاہوں تو مجھے اکیڈمی میں آنے نہیں دیا جارہا ،میں جب گزشتہ روز اکیڈمی آیا تو مکی آرتھر نے مجھے گالیاں دی اور کہا کہ تمہیں اندر کس نے آنے دیا ،تم جا کر کلب کرکٹ کھیلو۔عمر اکمل کا کہناتھا کہ جب مکی آرتھر نے گالیاں نکالیں اس وقت انضمام بھائی سمیت دیگر بڑے نام سامنے بیٹھے تھے لیکن کسی نے بھی انہیں روکا نہیں۔مجھے سمجھ نہیں آرہی کہ کوچنگ سٹاف ایسا رویہ کیوں اپنائے ہوئے ہے۔دوسری جانب قومی ٹیم کے ہیڈ کو چ مکی آرتھر نے عمر اکمل کو گالیاں نکالنے کا الزام مسترد کرتے ہوئے ڈانٹنے کا اعتراف کیاہے۔ مکی آرتھر کا کہناتھا کہ عمر اکمل اکیڈمی آئے اور انہوں نے بیٹنگ کوچ گرانٹ فلاور کی خدمات حاصل کرنے کی کوشش کی اور ان سے بیٹنگ ٹپس مانگیں تاہم عمرا کمل کنٹریکٹ پلیئر نہیں ہیں اور وہ سپورٹس سٹاف کو استعمال نہیں کر سکتے۔مکی آرتھر کاکہناتھا کہ میں نے انہیں کئی بار اس حرکت سے منع بھی کیا لیکن وہ باز نہیں آئے۔نجی ٹی وی کا کہناتھا کہ مکی آرتھر نے عمر اکمل سے کہا کہ وہ کنٹریکٹ کرکٹر نہیں ہیں ،اس لیے وہ پہلے جائیں اور کلب کرکٹ کھیلیں اپنی پرفارمنس بہتر کریں اور پھر انہیں استعمال کرنے کے حقوق حاصل کریں۔ دوسری جانب وسیم اکرم کا کہناتھا کہ کوچ انہیں ڈانٹیں گے نہیں تو کیا گود میں بٹھائیں گے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی