نوا ز شریف حکم دیں ، پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن میں رابطے بحال کرا سکتا ہوں : خواجہ آصف

نوا ز شریف حکم دیں ، پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن میں رابطے بحال کرا سکتا ہوں : ...
نوا ز شریف حکم دیں ، پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن میں رابطے بحال کرا سکتا ہوں : خواجہ آصف

  

اسلام آباد (این این آئی)وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف نے کہا ہے کہ نوازشریف حکم دیں تو وہ پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ ن کے رابطے بحال کرانے میں کردار ادا کرسکتے ہیں ٗسیاست ممکنات کا کھیل ہے جس میں دروازے کبھی بند نہیں ہوتے ٗنواز شریف نے کہا تو وہ ضرور کردار ادا کر یں گے ۔پورے بھارت میں مسلمانوں کا خون بہایا جا رہا ہے جب تک بھارت میں اس سوچ کا خاتمہ نہیں ہوتا تعلقات میں بہتری نہیں آسکتی ، کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کو پس پشت ڈال کر بھارت کے ساتھ تعلقات استوار نہیں کئے جا سکتے۔ ایک انٹرویو میں خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ افغانستان کی کشید ہ صورت حال کے حوالے سے مذاکرات کیلئے آئندہ دو ہفتوں میں امریکہ کا دورہ کروں گا کیوں کہ پاکستان کے امریکہ کے ساتھ تعلقات گذشتہ 70سال سے قائم ہیں واشنگٹن سے اختلافات ختم کرنا پاکستان کے مفاد میں ہے۔ پاک بھارت تعلقات خطے میں امن کیلئے ضروری ہیں مگر بھارت ہماری مشرقی اور مغربی سرحدوں پر حملہ آور ہے ، لائن آف کنٹرول کی مسلسل خلاف وزری ، پاک افغان بارڈ اور بلوچستان میں نئی دہلی کی پراکسی وار پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کی کوششیں ہیں جس کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا، بھارت اگر سمجھتا ہے کہ کلبھوشن یادیو دونوں ممالک کے تعلقات میں رکاوٹ ہے تو اسے یہ سمجھنا چاہئے کہ کلبھوشن ہم نے نہیں بھیجا بھارتی ایجنسی نے اسے پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنے کے لئے بھیجا تھا۔مودی سرکار کشمیریوں کو گلے لگانے کا درس دیتی ہے مگر دوسری جانب بے گناہ کشمیریوں کا خون بہایا جا رہا ہے۔بھارت کا یہ فلسفہ بغل میں چھری اور منہ میں رام رام کے مترادف ہے۔ نئی دہلی کے ساتھ مودی کے دور حکومت میں بہتر تعلقات کے امکانات نہیں اور نہ ہی موجودہ صورت حال میں کوئی بڑا بریک تھرو ہونے کا امکان ہے۔خواجہ آصف نے روس کے ساتھ تعلقات پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں وزیر دفاع ہوتے ہوئے متعدد بار روس گیا اور ہر دورے میں ماسکو کے ساتھ تعلقات میں بہتری آئی، بہت جلد روس کا دورہ بھی کروں گا کیوں کہ پاکستان کے لئے روس اور چین کے ساتھ بہتر تعلقات اہمیت کے حامل ہیں۔ متحدہ عرب امارت کے ساتھ میرا خصوصی لگاؤ ہے کیوں کہ1979ء سے میرے پاس یو اے ای حکومت کا اقامہ ہے ۔ ترکی کا ساتھ دینے کی وجہ سے خلیجی ریاستوں کے ساتھ تعلقات خراب ہوئے ہیں مگر ہم جلد ان تعلقات کو بہتر کر لیں گے۔

خواجہ آصف

مزید : صفحہ اول