شریف خاندان اب نہیں بچے گا ، جسٹس باقر نحفی رپورٹ شائع کی جائے : طاہر القادری

شریف خاندان اب نہیں بچے گا ، جسٹس باقر نحفی رپورٹ شائع کی جائے : طاہر القادری

لاہور( ایجو کیشن رپورٹر،ما نیٹر نگ ڈیسک ) پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے حوالے سے مرتب کردہ جسٹس باقر نجفی رپورٹ شا ئع کی جائے ،شریف برادران سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس میں پھندے پر لٹکیں گے،فیصل آباد ، ملتان ، راولپنڈی سمیت ملک بھر میں احتجاج کا دائرہ کا ر پھیلائیں گے ، جسٹس باقر نجفی کی رپورٹ کے حصول کیلئے دھرنے دے رہے ہیں ، شریف فیملی ہی اشرافیہ ہے اور ہم اسی کا خاتمہ چاہتے ہیں ،نوا ز شریف کے انقلاب کا مطلب ہے کہ نواز شہباز بچاؤ انقلاب ہے ، نوازشریف نے 30سال اقتدار میں رہ کر اپنے خاندان کو خوشحال کیا ہے اور ملکوں ملکوں بزنس ایمپائر قائم کر لئے ہیں ،بیرون ملک ٹھیکے اپنی رجسٹرڈ فرموں کو دے کر فرنٹ مینوں کے ذریعے دولت لوٹ رہے ہیں، نیب سے زیادہ فرنٹ مینوں کو میں جانتا ہوں ،ابھی انصاف کی پہلی کھڑکی کھلی ہے ، دروازہ کھلے گا تو راستہ کھلے گا،نواز شریف اپنے خاندان کو نہیں بچا سکتے، پانامہ کیس میں وزیر اعظم ہاؤس سے نکلے ہیں لیکن ماڈل ٹاؤن کیس میں دونوں بھائی لٹکنے والے ہیں۔ان خیالات کااظہار انہوں نے ماڈل ٹاؤن شہدا ء کے خاندانوں سے اظہار ہمدردی کیلئے مال روڈ پر دھرنے کے شرکاء سے خطاب کر تے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ اگر آپ ظلم کے سامنے سینہ سپر رہے ہیں اور وقت کے فر عون کی طاقت کو ٹھوکر مار دی ہے اور ثابت قدم رہے ہیں۔دنیا کی کو ئی طاقت آپ کو خرید نہیں سکتی اور آپ ڈٹے رہے ہیں میں۔انہوں نے کہا کہ شہداء کی فیملیوں کے عزم اور ہمت کو سلام پیش کر تا ہوں کہ آپ کو دولت مندوں نے خریدنے کی کوشش کی ہے لیکن آپ نے سب کو ٹھوکر مار ی ہے یہی ہمارے شہداء کے انصاف کیلئے اہم ترین سنگ میل ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ دن دور نہیں جب آ پ کو انصاف ملے گا اور ہر صورت ہم انصاف حاصل کر کے رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ جس وقت تک آپ کا دھرنا رہے گا میں اس وقت تک آپ کے ساتھ آخری لمحے تک رہوں گا ، آ ج کا دھرنا جسٹس باقر نجفی رپورٹ کیلئے ہے ، شہداء کے خاندانوں کا دھرنا ہے آ ج احتجا ج کی تاریخ ختم نہیں ہو گی بلکہ اس کے دائرہ کار کو ملک بھر تک پھیلائیں گے اور انصاف کیلئے عوام میں جائیں گے۔ انہوں نے کہا کوئی یہ مت سمجھے کہ شہداء کے لواحقین انصاف نہیں لے سکتے یہ تو شریف خاندان سے انصاف چھین کر لے سکتے ہیں لیکن یہ آئین اور قانون کا دامن چھوڑنا نہیں چاہتے ۔ڈاکٹرطاہر القادری نے شرکاء کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ یا د رکھو ابھی پاناما کیس کا چور پکڑا گیا ہے جبکہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے ذمہ دار کو پکڑنا باقی ہے ۔انہوں نے کہا کہ نا اہل نوا زشریف آئین سے امانت اور خیانت کو ختم کرنا چاہتے ہیں حالانکہ ووٹ کے تقدس کو پامال کر نے والے بھی وہی ہیں۔ نواز شریف نے سیاست میں پیسہ داخل کیا کیونکہ چھانگا مانگا سیاست کے موجود بھی نوازشریف ہیں اورنوازشریف نے جنر ل ضیا ء الحق کی گود میں بیٹھ کر دس سال تک اقتدار کے مزے لوٹے ہیں اور آج انہیں جمہوریت یاد آ گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف ایک ایم پی اے کو تین لاکھ ، چھ لاکھ ، نو لاکھ اور با رہ لاکھ میں خریدتے تھے جبکہ نواز شریف کا نعرہ تھا کہ جو شخص پانچ ایم پی لے کر آئے گا اسے وزارت دی جا ئے گی۔ انہوں نے کہا کہ نوا زشریف اس قدر بد دیانت اور دل میں نفرت رکھتے ہیں کہ مسلمان ایم پی اے کی قیمت د گنی اور غیر مسلم ایم پی اے کے درمیان بھی قیمت کا فرق رکھ کر نا انصافی کیا کرتے تھے۔ نواز شریف نے پاکستان میں ضمیر خریدنے اور سیاست میں پہلی مرتبہ پیسہ شامل کیا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ بد دیانت اور چوروں کا خاندان ہے جبکہ سارے خاندان میں جرات نہیں کے مجھے ڈٹ کر کہہ دیں آپ کی بات غلط ہے۔نواز شریف ہمیشہ سے جمہوریت دشمن حرکات کرتے تھے اور انہوں نے دو مرتبہ وزیر اعظم بنے والی بے نظیرکی حکومتوں کو صدور سے مل کر گرا دیا اگر انہیں ووٹ کے تقدس بحال کر وانے کا جذبہ ہو تا تو جی ٹی روڈ پر اس وقت آتے۔ انہو ں نے کہا کہ نواز شریف نے آمریت کی گود میں پل کر جمہوریت کے خلاف سازشیں کیں آج ووٹ کا تقدس یاد آگیا ہے۔ کیا نواز شریف کو 28جولائی سے پہلے نظام کا بدلنا یا د نہیں آیا ؟۔علامہ طاہرالقادری نے کہا کہ پارلیمینٹ میں خون چوسنے والے بیٹھے ہیں ،یہ جمہوریت کیسی ہے جو ہسپتال میں دوائیاں نہیں دیتی۔ڈاکٹر طاہر القادری نے چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ جسٹس باقر نجفی کی رپورٹ پبلک کرنے کیلئے غیر جانبدار بنچ تشکیل دیا جائے۔ ڈاکٹر طاہر القادری نے دھرنے کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف کہتے ہیں آئین میں ترمیم کریں گے، نواز شریف آئین سے امانت اور صداقت کو نکالنا چاہتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ نواز شریف 35 سال سے ملک میں برسراقتدار ہیں۔ان کا انقلاب "نواز شہباز بچاؤ’’ انقلاب ہے لہٰذاماڈل ٹاون میں 14لاشیں گرانے والے کس منہ سے انقلاب کی باتیں کرتے ہیں۔ڈاکٹر طاہرالقادری نے اپنی تقریر کے آخر میں مال روڈ دھرنے کو ختم کرنے کا بھی اعلان کیا۔علاوہ ازیں پاکستان عوامی تحریک کے زیر اہتمام استنبول چوک دھرنے میں پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور اپوزیشن لیڈرپنجاب اسمبلی میاں محمودالرشید، پاکستان عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد،جماعت اسلامی کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ تحریک انصاف کی رہنما ڈاکٹر فردس عاشق اعوان ،ڈاکٹر یاسمین راشد،عمرسرفراز چیمہ ،فواد چودھری اورمسلم لیگ ق کی رہنما سمیت مجلس وحدت مسلمین کی خواتین کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔احتجاجی دھرنے میں ماڈل ٹاؤن شہداء کے ورثاء نے سابق وزیر اعظم نوازشریف اور وزیر اعلی پنجاب کے خلاف زبردست نعرے بازی کی ۔مظاہرین نے ہاتھوں میں کتبے ،پلے کارڈز اور بینرز بھی اٹھارکھے تھے جن پر’’ قاتل شہباز شریف اور رانا ثناء اللہ کو پھانسی دو‘‘ کے مطالبات درج تھے۔اس موقع پرشہداء کے خاندان اور خواتین نے چیف جسٹس آف لاہو ر ہائیکورٹ سے اپیل کی کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے حوالے سے جسٹس باقر نجفی کی رپورٹ پبلک کی جائے۔

ڈاکٹر طاہرالقادری

مزید : صفحہ اول