سرائیکستان عوامی اتحاد کے رہنماؤں نے وزیر اعلیٰ کے دورہ ملتان کو مایوس کن قرار دیدیا

سرائیکستان عوامی اتحاد کے رہنماؤں نے وزیر اعلیٰ کے دورہ ملتان کو مایوس کن ...

ملتان (سٹی رپورٹر)سرائیکستان عوامی اتحاد کے رہنماؤں خواجہ غلام فرید کوریجہ ‘ (بقیہ نمبر52صفحہ12پر )

پروفیسر شوکت مغل ‘ رانا محمد فراز نون ‘ کرنل عبدالجبار خان عباسی ‘ ظہور دھریجہ ‘ عاشق بزدار ‘ سید مہدی الحسن شاہ ، عابدہ بخاری ‘ عابد سیال اور حاجی عید احمد دھریجہ نے وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہبازشریف کے دورہ ملتان کو مایوس کن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وزیراعلیٰ نے ملتان اور سرائیکی وسیب کے مسائل پر میٹنگ کرنا تک گوارا نہ کی اور نہ ہی ملتان بگ سٹی کے اعلان پر عمل درآمد کی ان کو توفیق ہوئی ۔ سرائیکی رہنماؤں نے کہا کہ وزیراعلیٰ جب بھی ملتان آتے ہیں تو مسائل میں اضافہ کر کے واپس چلے جاتے ہیں جیسا کہ مظفر آباد زیادتی کیس کے سلسلے میں وہ ملتان آئے ، انہوں نے مظلومہ عذرا اور ان کے لواحقین سے ملاقات کرکے ہمدردی کا اظہار کیا ، انصاف کا یقین دلایا اور تھانے کے عملے کو معطل کر دیا ۔ جونہی وزیراعلیٰ لاہور پہنچے تو مظلومہ عذرا ، اس کی بیوہ والدہ ، اس کی بہنیں اور دوسرے لواحقین تھانے میں بند ہو چکے تھے ۔ سرائیکستان عوامی اتحاد کے رہنماؤں نے کہا کہ زکریا یونیورسٹی میں سرائیکی شعبہ کو برباد کر کے رکھ دیا گیا ہے‘ کئی سالوں سے ایم فل اور پی ایچ ڈی سرائیکی کا نصاب منظور ہے ‘ مگر کلاسیں شروع نہیں کی جا رہیں ۔ سرائیکی ایریا سٹڈی سنٹر کے چھ ذیلی شعبہ جات منظور ہیں ، ان کے لئے ہر یونیورسٹی بجٹ میں رقم مختص کی جاتی ہے مگر نہ آسامیاں فل کی جا رہی ہیں اور نہ ہی ان شعبوں کو فنکشنل کیا جا رہا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر