خیبر ایجنسی میں رہائش پذیر افغان مہاجرین کا بھی رجٹریشن کا مطالبہ

خیبر ایجنسی میں رہائش پذیر افغان مہاجرین کا بھی رجٹریشن کا مطالبہ

خیبر ایجنسی (بیورورپورٹ)خیبر ایجنسی میں رہائش پذیر افغان مہاجرین نے بھی رجسٹریشن کا مطالبہ کیاخیبر پختونخوا میں گز شتہ روز سے افغان مہاجرین کا رجسٹریشن کا عمل شروع کیا گیا ہے جبکہ خیبر ایجنسی میں سینکڑوں غیر رجسٹرڈ افغان مہاجرین کی زندگی اجیرن ہو گئی ہے تمام چیک پوسٹوں پر شناختی کارڈچیکنگ کی وجہ سے نہ تو پشاور جا سکتے ہیں اور نہ وہ اپنے رشتہ داروں کے غم اور خوشی میں شریک ہو سکتے ہیں کیونکہ وہ پکڑے جانے سے اور ڈی پورٹ ہو نے سے گھبراتے ہیں گز شتہ سال طورخم با چہ مینہ اور لنڈیکوتل کے مختلف علاقوں میں افغان مہاجرین کے خلاف آپریشن کرکے انکے گھر مسمار کر دئیے اور درجنوں خاندان افغانستان بھیج دئیے جبکہ تحصیل جمرود میں کوکی خیل جر گے نے افغان مہاجرین کو نکالنے کا فیصلہ سنایا تھا اور انکے ساتھ ہر قسم کی کاروبار سمیت پراپراٹی دینے پر سخت پابندی عائد کر دی گئی تھی اسی طر ح سب تحصیل ملاگوری میں بھی جرگے نے افغان مہاجرین کو اپنے علاقوں سے نکال کر انکے گھر مسمار کر دئیے گئے تھے باڑہ بازار کھلنے کے بعد قومی مشران اور تاجروں نے باڑہ بازار میں افغان مہاجریں کی کاروبار پراور دوکان کرایہ دینے پر سخت پابندی عائد کر دی گئی ہیں خیبر ایجنسی کی تینوں تحصیلوں میں رہائش پذیر افغان مہاجر ین سخت مشکلات سے دو چار ہیں بلکہ وہ تحصیل سے باہر نہیں جا سکتے کیونکہ انکے پاس نہ رجسٹریشن کارڈ ہیں اور نہ قبائلی علاقوں میں رہائش پذیر افغان مہاجرین کو رجسٹریشن کا سہولت دیا گیا ہے اس سلسلے میں خیبر ایجنسی میں رہا ئش پذیر افغان مہاجرین میڈیا کو بتا یا کہ وہ کئی سالوں سے یہاں آباد ہیں اور وہ خوبصورت زندگی بسر کررہے تھے لیکن اب انکی زندگی مشکلات سے دوچار ہیں کیونکہ وہ نہ تو پشاور جا سکتے ہیں اور نہ دوسرے تحصیلوں میں یا تحصیل کے اندر دور افتادہ علاقے میں رشتہ داروں کے غم اور خوشی میں شر یک ہو سکتے ہیں کیونکہ انکے پاس کسی قسم کے کاغذات نہیں ہے اور چیک پوسٹوں پر شناختی کارڈز اور پاسپورٹ چیک کیا جا تا ہے انہوں نے کہا کہ وہ رجسٹریشن کیلئے پشاور نہیں جا سکتے کیونکہ پورے خاندان لے جانے پر بہت خرچہ آتا ہے اور چیک پوسٹوں پر پکڑے جانے اور ڈی پورٹ کرنے سے گھبراتے ہیں اس لئے حکومت سے پرزور اپیل کرتے ہیں کہ خیبر ایجنسی میں رجسٹریشن دفتر کھل دیا جائے یا حکومت کے پاس موبائل رجسٹرد سہولت موجود وہ بھیج کر انکے مشکلات کم کر یں افغان مہاجرین نے بتا یا کہ رجسٹرڈ نہ ہونے سے انکی کاروبار پرسخت متاثر ہو گیا ہے حکومت جلد ازجلد قبائلی علاقوں میں رہائش پذیر افغان مہاجرین کا رجسٹریشن کا عمل شروع کریں

مزید : کراچی صفحہ اول