’اب وقت آگیا ہے کہ پاکستانی جھنڈے میں تبدیلی کی جائے اوراس میں سے ۔ ۔ ۔‘زید حامد نے متنازعہ ترین بات کہہ دی، ایسی بات کہ پاکستانی غصے سے اٹھ کھڑے ہوئے

’اب وقت آگیا ہے کہ پاکستانی جھنڈے میں تبدیلی کی جائے اوراس میں سے ۔ ۔ ۔‘زید ...
’اب وقت آگیا ہے کہ پاکستانی جھنڈے میں تبدیلی کی جائے اوراس میں سے ۔ ۔ ۔‘زید حامد نے متنازعہ ترین بات کہہ دی، ایسی بات کہ پاکستانی غصے سے اٹھ کھڑے ہوئے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) معروف دفاعی تجزیہ نگار زیدحامد نے کہاہے کہ پاکستانی پرچم سے سفید رنگ ہٹادینا چاہیے ، اس بیان کے سامنے آتے ہی سوشل میڈیا پر ہنگامہ برپا ہوگیا اور صارفین نے انہیں شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے بیان واپس لینے کی بھی تجویز دی تاہم زیدحامد نے اپنا بیان واپس لینے سے انکار کردیا اور واضح کیا کہ اسلامی شناخت کیلئے ہی قائد اعظم اور علامہ اقبال لڑے تھے ۔

مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹوئیٹر پر بظاہر تقسیم سے قبل کی ایک تصویرشیئر کرتے ہوئے زید حامد نے لکھاکہ ’کیا آپ نے کبھی غور کیا کہ مسلم لیگ کا اصل جھنڈا سبز تھا، جس کے تلے ہم پاکستان کے لیے لڑئے اورآزادی حاصل کی ‘۔

زید حامد کی یہ ٹوئیٹ سامنے آتے ہی سوشل میڈیا صارفین نے انہیں آڑھے ہاتھوں لیا اور اقلیتوں کے تحفظ کی ضمانت دینے والے سفید رنگ کو جھنڈے سے الگ کرنے کی مخالفت کرتے ہوئے دی گرین فرنٹ نامی صارف نے لکھا کہ ’آپ سے اتفاق نہیں کرتا، یہ ہماری غیرمسلم اقلیتوں کیلئے ہے ، ان میں سے ان لوگوں جیسے بہت سے افراد نے حصہ لیا، پاکستان صرف مسلمانوں کی حفاظت کیلئے نہیں بلکہ برہمن، ہندوﺅں اور سکھوں کی حفاظت کیلئے بھی بنا‘۔

فواد بیگ نے استفسار کیا کہ پاکستان کا موجودہ جھنڈا قائد اعظم محمد علی جناح نے منظور نہیں کیا تھا؟‘

عامرہ فاروقی نے اپنے جذبا ت کا اظہار کچھ یوں کیا۔

صارفین نے زید حامد سے اپنے بیان پر معذرت کرنے کا مطالبہ کردیا اور ساتھ ہی ان کے ایک پرانے پیروکار محمد ابراہیم نے لکھا کہ ’آپ صرف اپنے غلط نظریئے کا دفاع کررہے ہیں، آپ کو یہ تسلیم کرلینا چاہیے ، میں آپ کا پرانا پیروکار ہوں اور آپ سے محبت کرتاہوں لیکن اس معاملے میں آپ سے مکمل اختلاف کرتاہوں‘۔

صارفین کی طرف سے شدید تنقید کے باوجود زید حامد نے اپنے بیان پر معذرت کرنے سے انکار کرتے ہوئے لکھاکہ ’ہم معافی مانگنے نہیں جارہے ، قائد اعظم اور علامہ اقبال اسلامی شناخت کیلئے لڑے، اقلیتیں اسلام میں محفوظ ہیں‘۔

مزید : قومی