چینی کی مصنوعی قلت اور قیمتوں میں اضافہ لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج

چینی کی مصنوعی قلت اور قیمتوں میں اضافہ لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج
چینی کی مصنوعی قلت اور قیمتوں میں اضافہ لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(نامہ نگار خصوصی )چینی کی مصنوعی قلت اور قیمتوں میں اضافہ لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا گیا ہے۔

نوجوانوں کا لیڈر بننے والاعمران خان اصل میں ان کی صلاحیت سے حسد کرتا ہے:عائشہ گلہ لئی

 درخواست عبید اللہ کلیار ایڈووکیٹ نے دائر کی ہے جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ شوگر ملز ایسوسی ایشن نے چینی کی مصنوعی قلت پیدا کر دی ہے، شوگر ملز ایسوسی ایشن سیاسی اور حکومتی شخصیات پر مشتمل ہے، شوگر ملز مافیا نے گٹھ جوڑ کر  کے چینی کی قلت پیدا کی ہے، مصنوعی قلت کی وجہ سے چینی کی قیمت 45سے 78روپے فی کلوگرام ہو گئی ہے جبکہ ریکارڈ کے مطابق چینی کی فی کلو لاگت 42روپے فی کلو بنتی ہے،  شوگر ملز ایسوسی ایشن کے پاس چینی کا اضافی سٹاک بھی موجود ہے لیکن پھر بھی شوگر ملز مافیا نے منافع خوری کے لئے مصنوعی قلت پیدا کی ہے، درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ عدالت چینی کی قلت ختم کرنے اور قیمتیں کم کرنے کا حکم دے۔

مزید : لاہور