پارٹی اجلاس سے پہلے فیصلوں پر مشاورت ہوتی ہے:راناثنا اللہ

پارٹی اجلاس سے پہلے فیصلوں پر مشاورت ہوتی ہے:راناثنا اللہ
پارٹی اجلاس سے پہلے فیصلوں پر مشاورت ہوتی ہے:راناثنا اللہ

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)صوبائی وزیر قانون پنجاب رانا ثناءاللہ کا کہنا ہے کہ ہر پارٹی اجلاس سے پہلے فیصلوں پر مشاورت ہوتی ہے جس کے بعد اجلاس میں ان فیصلوں کی تائید ہوتی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ کسی بھی جماعت میں اختلاف رائے ہوسکتا ہے، اختلاف رائے کے اظہار کو پارٹی میں مسائل قرار دینا غلط ہے۔

رانا ثنااللہ کا یہ بھی کہنا ہے کہ جس کی بات سنی جائے اسے خوشامدی سمجھا جاتا ہے۔ان کامزیدکہنا تھا کہ پارٹی کے اند ر اس بات پر اتفاق ہے کہ اگر شہاز شریف پارٹی صدرہوں تو زیادہ بہتر ہے،جبکہ شہباز شریف کو وزیر اعظم بنانے کا فیصلہ پارلیمانی پارٹی میں ہوا تھا۔

یہ بھی پڑھیں

ن لیگ کے قائم مقام صدر کا انتخاب، خواجہ سعد رفیق نے بھی چوہدری نثار کی رائے کی حمایت کر دی

ان کا یہ بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب میڈیامیں چوہدری نثار کی پارٹی پالیسی اور فیصلوں پر تنقید سامنے آرہی ہے۔

مزید : لاہور