مشکوک گاڑیوں کیخلاف کریک ڈاؤن ،195بلیک لسٹ ،118تھانے بند

مشکوک گاڑیوں کیخلاف کریک ڈاؤن ،195بلیک لسٹ ،118تھانے بند

لا ہور (کرائم رپورٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب کی ہدایات پرلاہور میں مشکوک گاڑیوں کے خلاف کریک ڈاؤن جاری ہے۔ ایک ماہ کے دوران پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی کیمروں کی مدد سے 8,345 گاڑیوں کا ریکارڈ چیک کیا گیا۔ 421گاڑیوں کا ریکارڈ درست نہیں تھاجبکہ 107 گاڑیوں پر جعلی نمبر پلیٹ آویزاں پائی گئی۔ اس دوران خلاف قانون سرگرمیوں پر 32 گاڑی مالکان کے خلاف لاہور پولیس کی جانب سے ایف آئی آر درج کروائی گئیں۔ ان گاڑیوں میں 3مرسڈیز ،3 آڈی، 11لینڈ کروزر،5ٹیوٹا ہایلکس ، 6ہنڈا، 3ٹیوٹا کرولا اور 1 رینج روورشامل ہیں۔ ایک ماہ میں 195گاڑیوں کو بلیک لسٹ کیا گیا جن کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ 118گاڑیوں کوکاغذات نہ ہونے یا جعلی نمبر پلیٹ پر متعلقہ پولیس سٹیشن بھجوایا گیا۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی کیمروں کے ذریعے خلاف قانون سرگرمی کی نشاندہی کرتی ہے جبکہ غیر قانونی گاڑیوں کے خلاف قانونی کارروائی لاہور پولیس کرتی ہے۔ قانون شکن عناصر کے خلاف ایف آئی آر درج کروانا اور ان کی گرفتاری پنجاب پولیس کا مینڈیٹ ہے۔ سیف سٹیز اتھارٹی کسی شہری کو گرفتار نہیں کرتی اور نہ ہی قانون شکن عناصر کو پولیس کی گرفت سے آزاد کروانا اتھارٹی کا مینڈیٹ ہے۔ ترجمان پنجاب سیف سٹیز اتھارٹی کے مطابق خلاف قانون سرگرمیوں پرہر کسی کے خلاف بِلا امتیاز کارروائی عمل میں لائی جاتی ہے۔ شہریوں سے اپیل کی جاتی ہے کہ وہ قانون کے مطابق صرف رجسٹرڈ گاڑیاں استعمال کریں اورکسی بھی غیر قانونی سرگرمی کی اطلاع15ایمرجنسی ہیلپ لائن پر دیں۔آئی جی پجاب کی ہدایات کے مطابق جرائم کی روک تھام کیلئے مشکوک اور غیررجسٹرڈ گاڑیوں کے خلاف کریک ڈاؤن جاری رہے گا۔

مزید : علاقائی