بد اخلاقی کیس ، متاثرہ بچی عدالت میں پیش،بیان قلمبند

بد اخلاقی کیس ، متاثرہ بچی عدالت میں پیش،بیان قلمبند

لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج فیاض احمد بٹر کی عدالت میں بداخلاقی کا شکار ہونے والی8سالہ بچی کے کیس کی سماعت ہوئی ، متاثرہ بچی کو اس کے والدین نے عدالت میں پیش کیا،فاضل جج نے ملزم وکیل کی درخواست ضمانت بعدازگرفتاری دائر ہونے پرتھانہ باٹا پور پولیس سے کل 18اگست کومقدمہ کاریکارڈ طلب کرلیاہے۔ایڈیشنل سیشن جج فیاض احمد بٹر کی عدالت میں 8سالہ بچی زرش سے بداخلاقی کیس میں گرفتار ملزم وکیل کی درخواست ضمانت کی سماعت سماعت شروع ہوئی تھی تو بچی نے عدالت میں بتایا کہ اس کے ساتھ ملزم وکیل نے مبینہ طور پربداخلاقی کی ،وہ علاقے کے جنرل سٹور سے کاپی لے کر گھر آ رہی تھی کہ ملزم نے اس کے منہ پر ہاتھ رکھ کراس کو اغوا کرلیا اور ویران جگہ پر لے جا کربدخلاقی کا نشانہ بنایا، عدالت میں بچی کے وکیل ملک عرفان نے ثبوت پیش کئے، عدالت نے ملزم کی درخواست ضمانت دائر ہونے پر تھانہ باٹا پور پولیس کو حکم دیا کہ وہ تفتیش مکمل کرکے عدالت میں ہفتے کو مقدمہ کاریکارڈ پیش کریں۔

سماعت کے بعد بچی کی والدہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اسے انصاف چاہیے، اگر چھ سالہ بچی زنیب کے قاتل عمران کو پھانسی دی جاسکتی تو میری بیٹی کے ملزم کو کیوں نہیں سزا مل سکتی؟

مزید : علاقائی