چینی حکومت کا 140پاکستانی طلباء کو سکالر شپ دینے کا اعلان

چینی حکومت کا 140پاکستانی طلباء کو سکالر شپ دینے کا اعلان

  

اسلام آباد(آئی این پی) چینی حکومت نے سال 2018-2019کے لیے 140پاکستانی طلباء کو سکالر شپ عطا کرنے کا اعلان کیا ہے،یہ وظائف دوطرفہ تعلیمی تبادلہ پروگرام کے تحت دیئے جائیں گے۔اس سلسلے میں گذشتہ روز یہاں چینی سفارت خانے میں ایک خصوصی تقریب منعقد ہوئی جس میں چین کے ڈپٹی چیف آف مشن لی جیان زاؤ اور ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے ایگزیٹوڈائریکٹرڈاکٹر ارشد علی کے علاوہ وظائف حاصل کرنے والے خوش قسمت طلباء نے بھی شرکت کی۔ ان طلباء کو انتخاب وزارت بین الصوبائی تعاون میں صوبائی حکومتوں کے مشورے سے کیا تھا۔ان طلباء میں30خواتین ہیں جن کا تعلق ملک کے مختلف علاقوں سے ہے۔ پاکستان دنیا میں سب سے زیادہ چینی وظائف حاصل کرنے والاملک بن گیا ہے۔اس وقت چین میں 7ہزار پاکستانی طلباء مختلف شعبوں اور مختلف چینی یونیورسٹیوں میں زیر تعلیم ہیں،چینی وظائف پر چین میں تعلیم حاصل کرنے والے غیر ملکی طلباء میں پاکستانیوں کی تعداد سب سے زیادہ ہے،یہ ذہین طلباء چین کی اعلیٰ یونیورسٹیوں میں گریجوایشن،ماسٹر،پی ایچ ڈی یا دیگر اعلیٰ تربیتی پروگراموں میں زیرتعلیم ہیں۔جن میں میڈیکل،کمپیوٹرسائنس،ٹیکنالوجی،بزنس ایڈمنسٹریشن، سول انجینئرنگ،بین الاقوامی قانون اور صحافت شامل ہیں۔طلباء کی تعداد میں سی پیک کی بدولت گذشتہ چار سال میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔فی الحال 1ہزار کے قریب طلباء سالانہ وظائف حاصل کرتے ہیں۔تقریب میں اظہار خیال کرتے ہوئے نڈپٹی چیف آف مشن لی جیان زاؤ نے اعلان کیا کہ وہ سماجی اور اقتصادی شعبے میں پاکستان کے ساتھ یہ فراخ دلانہ پالیسی جاری رہے گی، انہوں نے توقع ظاہر کی کہ چین اور چینی ثقافت کے ساتھ روشناس ہونے کے بعد ان طلباء کا مستقبل روشن ہو گا۔ طلباء کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ طلباء اپنے ملک اور خاندانوں کا وقار ثابت ہونگے اور انہیں اپنے دوسرے ساتھیوں کیلئے نمونہ بنانا چاہیے۔

مزید :

علاقائی -