الیکشن کمیشن کا نیب ، ایف آئی اے تحقیقات میں شامل ارکان کو وزارت نہ دینے کا مشورہ

الیکشن کمیشن کا نیب ، ایف آئی اے تحقیقات میں شامل ارکان کو وزارت نہ دینے کا ...

  

 کراچی(سٹاف رپورٹروفاقی اور صوبائی حکومتوں کی تشکیل میں کئی مشکلات کھڑی ہوگئیں۔ الیکشن کمیشن نے واضح کردیا ہے کہ نیب اور ایف آئی اے کی جس رکن اسمبلی کیخلاف تحقیقات جاری ہے اس رکن اسمبلی کو وفاقی اور صوبائی وزیر نہ بنایا جائے کیوں کہ اب ان ارکان اسمبلی کی تحقیقات کا دوسرا مرحلہ ان کی گرفتاری کا ہے اور جب کسی رکن اسمبلی کو وزیر بنایا جائیگا تو اس کی گرفتاری اچھی بات نہیں ہوگی۔ اس لئے ان ارکان اسمبلی کو وزیر بنایا جائے جن کو نیب اور ایف آئی اے سے کلیئرنس ملے۔ اس صورتحال میں وفاقی اور صوبائی حکومت کی تشکیل میں مشکلات کھڑی کردی ہیں۔ سب سے زیادہ مشکلات حکومت سندھ کی تشکیل کیلئے ہورہی ہیں کیوں کہ پی پی سے تعلق رکھنے والے8ارکان سندھ ا سمبلی کیخلاف مالی بے قاعدگیوں کی نیب میں تحقیقات آخری مرحلے میں داخل ہوگئی۔ اس شرط کے بعد فریال تالپور ،جام خان شورو ،امداد پتافی سید سردار شاہ ،فیاض بٹ اورسہیل انور سیال کے وزیر بننے کے امکانات کم ہوگئے ہیں۔

الیکشن کمیشن

مزید :

صفحہ اول -