انور مجیداور بیٹے عبدلغنی کا ایف آئی اے حکام کیساتھ جارحانہ رویہ، ہتھکڑی زمین پر پٹخ دی

انور مجیداور بیٹے عبدلغنی کا ایف آئی اے حکام کیساتھ جارحانہ رویہ، ہتھکڑی ...

  

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک) اومنی گروپ کے مالک اور سابق صدر آصف علی زرداری کے قریبی دوست انور مجید اور ان کے بیٹے عبدالغنی مجید کو ایف آئی اے کی ٹیم گزشتہ روز خصوصی طیارے میں لے کرکراچی ایئرپورٹ پہنچی توایئرپورٹ لاؤنج میں وفاقتی تحقیقاتی ادارے کے اہلکار نے عبدالغنی کو ہتھکڑی پہنانے کی کوشش کی جس پر دونوں باپ بیٹے نے اہلکار سے ہتھکڑی چھین کر فرش پر پھینک دی۔بعد میں دونوں کو ایف آئی اے کمرشل بینکنگ سرکل منتقل کردیا گیا، کل ایف آئی اے کی جانب سے دونوں کو عدالت میں پیش کئے جانے کا امکان ہے ۔ دو نوں کو ایف آئی اے نے سپریم کورٹ سے درخواست ضمانت مسترد ہونے پرکمرہ عدالت سے گرفتار کیا تھا۔جعلی بینک اکاؤنٹس کیس میں گر فتا ر اومنی گروپ کے مالک انور مجید اور ان کے صاحبزادے عبدالغنی کو اسلام آباد سے کراچی پہنچا یاگیاہے۔سابق صدر آصف علی زرداری کے قریبی دوست انور مجیدکا سول جج وجوڈیشل مجسٹریٹ رضوان الدین کی عدالت میں منی لانڈرنگ کیس میں راہداری ریمانڈ منظور کر لیا گیا ہے ۔تفصیلات کے مطابق اومنی گروپ کے مالک ملزم انور مجید کو گزشتہ روز سول جج رضوان الدین کی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں ان کاراہداری ریمانڈ منظور کیا گیا۔ واضح رہے کہ اومنی گروپ کے مالک انور مجید کو دو دن قبل سپریم کورٹ میں جعلی بینک اکاؤنٹ کے ذریعے منی لانڈرنگ کیس میں حفاظتی ضمانت مسترد ہونے پرگرفتار کیا گیا تھا ۔دریں اثنا ء میڈیارپورٹس کے مطابق منی لانڈرنگ سکینڈل میں گرفتار انور مجید اور عبدالغنی کو کراچی منتقل کردیا گیا ہے ، جبکہ ایف آئی اے نے انور مجید کی شوگرملز بھی سیل کردی ہیں ۔رپورٹس کے مطابق ایف آئی اے ذرائع کا کہنا ہے کہ اومنی گروپ کے خلاف بھی تحقیقات ہونگی ۔

انور مجید ریمانڈ

مزید :

صفحہ اول -