نہر صادق آباد برانچ ، کاشتکاروں کا ہیڈ پر دھاوا، انہار عملے کی دھنا

نہر صادق آباد برانچ ، کاشتکاروں کا ہیڈ پر دھاوا، انہار عملے کی دھنا

رحیم یارخان(نمائندہ پاکستان)محکمہ انہا رکی جانب سے کاشتکاروں کوفصلوں کیلئے نہری پانی کی عدم فراہمی پر سینکڑوں کاشتکاروں نے نہر صادق برانچ پر بنائے گئے ہیڈ سے زبردستی گیٹ کھول کر پانی نل واہ مائنراور واہ کہنہ مائنر میں چھوڑدیا۔ کاشتکاروں نیمزاحمت کرنے پر عملہکو تشددکا نشانہ بنایا۔ 50سے زائد زمینداروں کے خلاف پولیس نے سنگین دفعات کے تحت2الگ الگ مقدمات درج کرلیے۔ تفصیل کے مطابق چک 134پی کے(بقیہ نمبر42صفحہ12پر )

نزدیک نہر صادق برانچ پر محکمہ انہار کے عملہ کی جانب سے تعمیر کیے گئے ہیڈ سے نل واہ مائنر اور واہ کہنہ مائنر میں نہری پانی کی چلت کیلئے دھاوا بول دیا اور زبردستی ہیڈ کے گیٹ توڑ کر نل واہ مائنر اور واہ کہنہ مائنر میں پانی چھوڑدیا اس موقع پر ڈیوٹی پر موجود محکمہ انہار کے عملہ نے کاشتکاروں کو زبردستی گیٹ کھولنے سے روکنے کی کوشش کی تو کاشتکاروں نے محکمہ انہار کے عملہ کو یرغمال بناتے ہوئے انہیں تشدد کانشانہ بنایا اور ان کے پاس موجود موبائل فون اورنقدی تک چھین لی واقع کی اطلاع پر متعلقہ ایس ڈی او ریاض حسین یرغمال بنائے گئے عملہ کو رہائی دلانے کیلئے پولیس کی بھاری نفری طلب کرلی جس کے آتا دیکھ کر مشتعل کاشتکار غائب ہونا شرو ع ہوگئے بعد ازاں پولیس نے ایس ڈ ی او انہار ریاض حسین کی مدعیت میں 50 سے زائد کاشتکاروں کے خلاف مقدمات درج کرکے کا رروائی شروع کردی ہے۔

انہار کے عملے کی دھنائی

مزید : ملتان صفحہ آخر