ضلع کونسل ملاکنڈ کا 4ارب 70 کروڑ سے زائد کا بجٹ متفقہ طور پر منظور

ضلع کونسل ملاکنڈ کا 4ارب 70 کروڑ سے زائد کا بجٹ متفقہ طور پر منظور

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)ضلع کونسل ملاکنڈ کا مالی سال 2018-19 کیلئے 4 ارب، 70 کروڑ، 19 لاکھ، 4 ہزار اور 244 روپے کے بجٹ کی متفقہ طور پر منظوری دی گئی۔ نئے بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا گیاہے اور اس میں ترقیاتی پروگرام کیلئے مختص کردہ فنڈ کا حجم تقریباََ 26 کروڑ، 37 لاکھ، 44 ہزار اور 272 روپے ہے ۔ جبکہ ضلع کونسل کیلئے 2017-18 کے Revised Budget کی بھی منظوری دی گئی ہے ۔ جمعرات کے روز ضلع کونسل ہال بٹ خیلہ میں مالی سال کے بجٹ اجلاس کا انعقاد ہوا جس کی صدارت ضلع کونسل ملاکنڈ کے کنوینئر اور نائب ناظم کرنل (ر) ابرار نے کی ۔ اجلاس میں ضلع کونسل کے ممبران اور لائن ڈیپارٹمنٹس کے افسران اور نمائندوں نے شرکت کی ۔منعقدہ اجلاس میں ضلع ناظم سید احمد علی شاہ باچہ نے مالی سال 2018-19 کا بجٹ پیش کرتے ہوئے کہا کہ نئے بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا گیا ہے اور ہر شعبے کیلئے مناسب انداز میں فنڈ رکھے گئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ترقیاتی سکیموں کے حوالے سے سال 2018-19 کی نئی سکیموں کیلئے 7 کروڑ، 87 لاکھ اور 96 ہزار روپے رکھے گئے ہیں جبکہ 14 کروڑ ،16 لاکھ ایک ہزاراور 656 روپے مالی سال 2017-18 کی سکیموں کیلئے رکھے گئے ہیں ۔اسی طرح مختلف شعبوں کیلئے مختص کردہ رقوم کے سلسلے میں صحت کے شعبے میں ضلع کے ہسپتالوں میں ادویات اور دیگر سازوسامان کی خریداری ، ملیریا سے بچاو کی غرض سے مچھر مار سپرے کیلئے پی او ایل کی فراہمی اور دیگر ضروریات کیلئے خطیر رقم رکھی گئی ہیں ۔ ضلع ناظم نے کہا کہ ہیپیٹائٹس کیلئے بھی ادویات کی فراہمی کے سلسلے میں بھی 20 لاکھ روپے مختص کئے گئے ہیں جبکہ زراعت کی ترقی کیلئے تقریباََ 35 لاکھ روپے رکھے گئے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ لائیوسٹاک ، واٹر منیجمنٹ ، محکمہ تحفظ اراضیات اور دیگر محکمہ جات کیلئے بھی مناسب انداز میں فنڈ مختص کیا گیا ہے جو عوام کی فلاح وبہبود کیلئے خرچ کرنے کی کوشش کی جائے گی ۔ ضلع ناظم نے کہا کہ سکولوں میں غریب اور نادار طلبہ کیلئے یونیفارم اور سکول بیگز کی مفت فراہمی کی سکیم آئندہ بھی جاری رکھی جائے گی تاکہ کوئی نادار طالب علم زیور تعلیم سے محروم نہ رہ سکے۔انہوں نے کہاکہ ضرورت کے مطابق Revised Budget میں محکموں کیلئے فنڈز کے اجراء میں اضافہ بھی کیاجائے گاتاہم تمام محکمے اپنی کارکردگی کوبہتر بنانے اور عوامی خدمات کے سلسلے میں اپنے فرائض اور ذمہ داریاں احسن طریقے سے ادا کریں ۔ضلع ناظم نے بجٹ پاس کرنے میں کونسل کے تمام اراکین کا شکریہ ادا کیا اور امید ظاہر کی کہ ایوان میں آئندہ کیلئے بھی باہمی تعاون کا ماحول برقرار رہے گا ۔ضلع ناظم نے کہا کہ ہم سب کا ہدف صرف اور صرف عام شہری کی بہتری اور خوشحالی ہے اور اس کے حصول کیلئے ہم سب مل کر کام کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ضلعی نظام حکومت سے عوام نے سب سے زیادہ توقعات وابستہ کررکھی ہوتی ہیں ا سلئے ہمیں موجودہ بجٹ کے مندرجات کومدنظر رکھتے ہوئے بہتر منصوبہ بندی کرنی ہوگی تاکہ ضلع کو ملنے والی گرانٹس کو یہاں کے منتخب نمائندہ گان کی مشاورت سے عوام کی فلاح کے کاموں پر خرچ کیا جاسکے اور عوامی مسائل کا ازالہ ہو۔ ضلع کونسل اجلاس میں تمام اراکین نے اظہار خیال کیا اور نئے بجٹ پر اپنی آراء پیش کیں ۔ کونسل کا آئندہ اجلاس عیدالاضحی کے بعد دوبارہ طلب کیا جائے گا ۔

Back to

مزید :

پشاورصفحہ آخر -