عمران علی شاہ کی معطلی ،پی ٹی آئی رہنماؤں کے متضاد بیانات

عمران علی شاہ کی معطلی ،پی ٹی آئی رہنماؤں کے متضاد بیانات

کراچی (اسٹاف رپورٹر)شہری کو تھپڑ مارنے کے معاملے پر پاکستان تحریک انصاف کے رکن سندھ اسمبلی عمران علی شاہ کی معطلی کے حوالے سے تحریک انصاف کے رہنماؤں کے متضاد بیانات سامنے آئے ہیں ۔ تحریک انصاف کے سینئر رہنما علی زیدی نے کہا ہے کہ عمران علی شاہ کا معاملہ انضباطی کمیٹی کے سپرد کر دیا گیا ہے،کمیٹی کی تحقیقات مکمل ہونے تک عمران شاہ معطل ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ انضباطی کمیٹی کو ایک ماہ میں عمران شاہ کے شہری کو تھپڑ مارنے کے معاملے کی تحقیقات مکمل کرنی ہے۔رکن قومی اسمبلی نجیب ہارون نے بھی عمران علی شاہ کی معطلی کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ معاملے کی سنجیدگی دیکھتے ہوئے رکنیت ایک ماہ کے لئے معطل کی ہے، فیصلہ ڈسپلنری کمیٹی معاملات کرے گی۔علاوہ ازیں پی ٹی آئی کے رہنما اور ترجمان فواد چوہدری نے عمران شاہ کے شہری کے ساتھ ناروا سلوک کے حوالے سے کہا کہ معاملہ پی ٹی آئی سندھ کے حوالے کر دیا ہے، وہ اسے دیکھے گی، پی ٹی آئی سندھ انکوائری کے بعد ایکشن لے گی۔ تاہم پی ٹی آئی کے ترجمان نے عمران علی شاہ کی معطلی کی خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ڈاکٹر عمران شاہ سے ڈسپلنری کمیٹی نے ایک دن میں جواب طلب کیا ہے۔ڈاکٹر عمران شاہ کو جواب جمع کروانے کے لئے مزید 24 گھنٹے کی مہلت دی گئی ہے۔ابھی ان کی پارٹی رکنیت معطل کرنے کے حوالے سے کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر