پی ایس پی کی انتخابی نتائج کے خلاف ہائی کورٹ میں درخواست

پی ایس پی کی انتخابی نتائج کے خلاف ہائی کورٹ میں درخواست

کراچی (اسٹاف رپورٹر)پاک سر زمین پارٹی کے رہنماآصف حسنین اور افتخار عالم نے سندھ ہائی کورٹ میں کراچی کے عام انتخابات کے نتائج کے خلاف اپنے وکیل کے توسط سے درخواست دائر کی ہے ۔درخواست میں حلقہ نمبر236 سے لیکر 257 تک تمام حلقوں کی دوبارہ گنتی سے متعلق عدالت سے استدعا کی گئی ہے ۔پی ایس پی رہنماؤں نے ایڈووکیٹ حسان صابر کے توسط سے درخواست دائر کی ہے۔درخواست میں موقف اختیار کیاگیا ہے کہ 25 جولائی کو کراچی میں ہونے والے الیکشن کو کا لعدم قرار دیا جائے۔کراچی کے نتائج دو دن بعد دیئے گئے اورہمارے پولنگ ایجنٹس کو باہر نکال دیا گیا تھا۔ہم اس الیکشن کو مسترد کرتے ہیں۔درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ انتخابات کے حوالے سے تمام ریکارڈ عدالت میں پیش کیا جائے۔ریٹرننگ و پریذاڈننگ افسران کے جواب تک ہماری رسائی ہونی چاہِے۔آر ٹی ایس سسٹم کا بند ہوجانا اور فارم 45 نہ دینے کی مکمل تحقیقات ہونی چاہِیے۔درخواست میں کہاگیاہے کہ الیکشن کمیشن نے ہماری درخواست کو مسترد کر دیا تھا۔الیکشن ٹرینونل میں کیس اس وقت جائے گا جب سندھ ہائی کورٹ میں اسکی سماعت ہوگی ۔ہم الیکشن کی شفافیت کو جانچنا چاہتے ہیں۔درخواست میں مزید کہاگیاہے کہ25جولائی کے الیکشن پر نہ صرف سیاسی جماعتوں بلکہ بین الاقوامی میڈیا میں بھی تحفظات پائے جاتے ہیں۔بعدازاں میڈیا سے بات چیت میں پی ایس پی کے رہنما آصف حسنین نے کہاکہ کراچی کے حقوق کے لیے ہم ہر جگہ گئے ہیں۔25 جولائی کو منتخب ہونے والے نمائندے اب 100 دنوں میں کراچی کے مسائل حل کر پائینگے،یہ سوالیہ نشان ہے۔100 دنوں میں جیتنے والوں کی کارکردگی سامنے آجائے گی۔25 جولائی کو الیکشن نہیں سیلکیشن ہوا تھا۔انہوں نے کہاکہ ہم عدالتوں کے دروازے کھٹکھٹا رہے ہیں

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر