پنجاب پولیس نے اس جوڑے کو پکڑ کر بیرک میں ہی چارپائی پر باندھ دیا، مرد اہلکاروں کا انتہائی شرمناک سلوک لیکن کیوں؟ ایسی خبرآگئی کہ تحریک انصاف بھی ہل کر رہ جائے گی

پنجاب پولیس نے اس جوڑے کو پکڑ کر بیرک میں ہی چارپائی پر باندھ دیا، مرد ...
پنجاب پولیس نے اس جوڑے کو پکڑ کر بیرک میں ہی چارپائی پر باندھ دیا، مرد اہلکاروں کا انتہائی شرمناک سلوک لیکن کیوں؟ ایسی خبرآگئی کہ تحریک انصاف بھی ہل کر رہ جائے گی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

شکر گڑھ(ویب ڈیسک) صوبہ پنجاب کے ضلع نارووال کی تحصیل شکر گڑھ میں پولیس نے چوری کے الزام میں خاتون ملازمہ اور اس کے شوہر کو گرفتار کرلیا، اس دوران نہ صرف مرد اہلکاروں نے خاتون پر تشدد کیا بلکہ اُسے اور اُس کے شوہر کو ہتھکڑی لگا کر چارپائی سے باندھ کر بھی رکھا گیا۔

 جیو نیوز کے مطابق شکر گڑھ میں اخلاص پور روڈ کی رہائشی 22 سالہ فروا وقاص اخراجات پورے کرنے کے لیے گھریلو ملازمہ کے طور پر کام کرتی تھی۔2 روز قبل گھر کے مالک شیخ شہباز نے فروا پر 3 لاکھ روپے چرانے کا الزام لگا کر تھانا سٹی میں مقدمہ درج کرا دیا۔

 پولیس نے فروا اور اس کے شوہر کو گرفتار کرکے تھانے کی بیرک میں قید کردیا۔اس موقع پر دونوں سے نامناسب سلوک کیا گیا اور دونوں میاں بیوی کو ایک ہتھکڑی لگا کر چارپائی کے ساتھ باندھا گیا ہے۔

ملزمہ نے الزام عائد کیا کہ اسے اور اس کے شوہر کو مرد پولیس اہل کاروں نے تشدد کا نشانہ بنایا اور تفتیش کے لیے کسی خاتون پولیس اہلکار کو شامل نہیں کیا گیا۔دوسری جانب تھانہ سٹی کے ایس ایچ او انسپکٹر محمد عظیم نے موقف اختیار کیا کہ بارش کے بعد حوالات میں پانی بھرنے کے باعث ملزمہ اور اس کے شوہر کو بیرک میں رکھا گیا۔

مزید : علاقائی /پنجاب /نارووال