انتظامیہ کی غفلت ،ڈسٹرکٹ ہسپتال سرگودھا میں 6 نومولود بچے زندگی کی بازی ہار گئے

انتظامیہ کی غفلت ،ڈسٹرکٹ ہسپتال سرگودھا میں 6 نومولود بچے زندگی کی بازی ہار ...
انتظامیہ کی غفلت ،ڈسٹرکٹ ہسپتال سرگودھا میں 6 نومولود بچے زندگی کی بازی ہار گئے

  


سرگودھا(ڈیلی پاکستان  آن لائن)ڈسٹرکٹ ٹیچنگ اسپتال کے چلڈرن وارڈ میں6 نومولود بچوں کی ایک ہی دن میں اموات معمہ بن گئی،لواحقین نے اموات کا ذمہ دار ہسپتال انتظامیہ اور ڈاکٹروں کو قرار دے دیا جب کہ ڈاکٹروں نے اموات کی بنیادی وجہ بچوں کی قبل از وقت پیدائش بتائی ہے۔ 

نجی ٹی وی کے مطابق  بچوں کی یکے بعد دیگرے ہونے والی اموات کی اصل وجوہات جاننے کے لیے تحقیقات کی جارہی ہیں۔ڈسٹرکٹ ٹیچنگ ہسپتال سرگودھا کے چلڈرن وارڈ میں نصف درجن نومولود بچے ایک ہی دن میں زندگی کی چند سانسیں لے کر ہمیشہ کی نیند سو گئے تو لواحقین کا غم و غصہ عروج پر پہنچ گیا۔ جن بچوں نے اپنی جانوں کی بازی ہسپتال میں ہاری وہ مختلف علاقوں سے ہسپتال لائے گئے تھے۔نومولود بچوں کے لواحقین کا الزام ہے کہ ہسپتال انتظامیہ کی غفلت کے باعث ایئرکنڈیشنرز کام نہیں کررہے ہیں جس کی وجہ سے سخت گرمی اور شدید حبس ہے جو بچوں کی اموات کی وجہ بنا۔ ان کا کہنا ہے کہ بچوں کی اموات کی ایک بڑی وجہ ڈاکٹروں کی غفلت بھی ہے کہ انہوں نے مناسب دیکھ بھال نہیں کی اور نومولودوں کو درکار توجہ نہ دی۔  ہسپتال کے ایم ایس کا کہنا ہے کہ ایئرکنڈیشنرز کے کام نہ کرنے کے الزام میں کوئی صداقت نہیں ہے۔ انہوں نے دعوی کیا کہ تمام بچوں کی پیدائش قبل از وقت ہوئی تھی تاہم ان کا کہنا تھا کہ اس ضمن میں مزید تحقیقات کی جارہی ہیں تاکہ حقائق سامنے آسکیں۔بچوں کی قبل از وقت پیدائش فی الوقت میڈیکل سائنس میں کوئی غیرمعمولی واقعہ تسلیم نہیں کیا جاتا ہے،جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے روزانہ قبل از وقت پیدا ہونے والے سینکڑوں نومولودوں کی زندگیوں کو محفوظ بنایا جاتا ہے۔ ہسپتال کے ایم ایس کے مقف کو میڈیکل سے وابستہ افراد حیران کن ہی قرار دیں گے۔

دوسری طرف صوبائی وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے ڈی ایچ کیو میں 6 بچوں کے جاں بحق ہونے کا نوٹس لیتے ہوئےرپورٹطلب  کرلی ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /سرگودھا


loading...