بھارتی فنکاروں والے اشتہارات پر پابندی بہت پہلے ہی لگ جانی چاہیے تھی، شوبز شخصیات

بھارتی فنکاروں والے اشتہارات پر پابندی بہت پہلے ہی لگ جانی چاہیے تھی، شوبز ...

  

لاہور (فلم رپورٹر) شوبز کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی کی جانب سے ایسے اشتہارات جن میں بھارتی اداکار، فنکار یا گلوکار وغیرہ موجود ہوں، نشر کرنے پر پابندی کے فیصلے کا خیر مقدم ہے۔ بھارتی ٹیلنٹ اور اس کے اشتراک سے بنائے گئے اشتہارات پر پابندی کا فیصلہ انڈسٹری سے تعلق رکھنے والے تمام افراد نے سراہتے ہوئے کہا ہے کہ یہ فیصلہ بہت پہلے ہوجانا چاہیے تھا کیونکہ اس کا نقصان ہمارے ملک کو ہی پہنچ رہا تھاپاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی کی طرف سے جاری نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان نے پہلے ہی پاکستان میں بھارتی مواد (فلم، ڈرامے، رئیلٹی شوز) نشر کرنے پر پابندی عائد کررکھی ہے تاہم یہ بات مشاہدے میں آئی ہے کہ پاکستانی ٹی وی چینلز پر مختلف کثیر القومی مصنوعات کے اشتہارات میں بھارتی فنکاروں کی خدمات حاصل کی جارہی ہیں اور انہیں پاکستان میں نشر کیا جارہا ہے۔پیمرا کے مطابق پاکستانی ٹی وی سکرینز پر بھارتی اداکاروں کی نمائش ان پاکستانیوں کے زخموں پر نمک چھڑکنے کے مترادف ہے جو کشمیر میں بھارتی مظالم پر پہلے ہی مضطرب ہیں۔نوٹیفکشن میں کہا گیا کہ اس تناظر میں پیمرا بھارت میں بننے والے اشتہارات بالخصوص وہ جن میں بھارتی اداکار موجود ہوں، نشر کرنے پر پابندی عائد کرتی ہے جس کا اطلاق فوری طور پر ہوگا۔پیمرا کے مطابق جن مصنوعات کے اشتہارات میں بھارتی اداکار موجود ہیں ان کو نشر کرنے پر پابندی اس وقت تک برقرار رہے گی جب تک اشتہار پاکستان میں تیار نہیں ہوتے اور ان میں پاکستانی ٹیلنٹ کو شامل نہیں کیا جاتا۔نوٹیفکیشن کے مطابق خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔یاد رہے کہ کترینہ کیف،سونم کپور،دیپکا پیڈکون اور کرینہ کپور سمیت بالی ووڈ کے بہت سے دیگر نامور فنکار پاکستانی پراڈکٹ سمیت ملٹی نیشنل کمپنیوں کے اشتہارات میں کام کرچکے ہیں جس کے ساتھ ساتھ بہت سے بھارتی ماڈلز اور ٹاپ اداکارائیں مختلف پاکستانی ڈیزائنر اور ٹیکسٹائل برانڈز کے لئے بھی ماڈلنگ کرچکے ہیں۔ شاہد حمید،ماریہ واسطی،احسن خان، زارا شیخ،زین بیگ،اسد جبل،فاروق مینگل،سعدیہ خان،آمنہ الیاس،رابعہ بٹ، اسد زمان،دانش نواز،امین اقبال،معمر رانا،مسعود بٹ،حسن عسکری،شانسید نور، میلوڈی کوئین آف ایشیاء پرائڈ آف پرفارمنس شاہدہ منی،صائمہ نور،میگھا،ماہ نور،لائبہ علی،انیس حیدر،لالہ شہزاد،ہانی بلوچ،یار محمد شمسی صابری،سہراب افگن،ظفر اقبال نیویارکر،عذرا آفتاب،حنا ملک،انعام خان،فانی جان،عینی طاہرہ،عائشہ جاوید،میاں راشد فرزند،سدرہ نور،نادیہ علی،شین،سائرہ نسیم،صبا ء کاظمی،،سٹار میکر جرار رضوی،آغا حیدر،دردانہ رحمان،ظفر عباس کھچی،سٹار میکر جرار رضوی،ملک طارق،مجید ارائیں،گلفام،سمیع خان،طالب حسین،قیصر ثنا ء اللہ خان،مایا سونو خان،عباس باجوہ،مختار چن،آشا چوہدری،اسد مکھڑا،وقا ص قیدو، ارشدچوہدری،چنگیز اعوان،حسن مراد،حاجی عبد الرزاق،حسن ملک،عتیق الرحمن،ریما خان،اشعر اصغر،آغاعباس،صائمہ نور،خرم شیراز ریاض،خالد معین بٹ،مجاہد عباس،ڈائریکٹر ڈاکٹر اجمل ملک،کوریوگرافر راجو سمراٹ،صومیہ خان،حمیرا چنا،اچھی خان،شبنم چوہدری،محمد سلیم بزمی،سفیان،انوسنٹ اشفاق،استاد رفیق حسین،فیاض علی خاں،پروڈیوسر شوکت چنگیزی،ظفر عباس کھچی،ڈی او پی راشد عباس،پرویز کلیم،نیلم منیر خان اور نجیبہ بی جی سمیت بہت سے دیگر شوبز شخصیات نے حکومت کے اس فیصلے کی تائید کی ہے۔

مزید :

کلچر -