جسٹس فائز عیسیٰ کےخلاف ریفرنس کالعدم قرار دینے کیلئے سپریم کورٹ میں رٹ دائر

  جسٹس فائز عیسیٰ کےخلاف ریفرنس کالعدم قرار دینے کیلئے سپریم کورٹ میں رٹ دائر

اسلام آباد(آن لائن)سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن پاکستان کی طرف سے جاری اعلامیہ کے مطابق ایسو سی ایشن کی ایگزیکٹو کمیٹی کے 7 اگست 2019 کو کوئٹہ میں منعقدہ اجلاس کے متفقہ فیصلے کی روشنی میں سپریم کورٹ کے سینئر جج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کےخلاف حکومت کی جانب سے بدنیتی پر مبنی ریفرنس سپریم جوڈیشل کونسل میں دائر کئے جانے کےخلاف سپریم کورٹ پاکستان کے براہ راست آئینی دائرہ اختیار کے تحت آرٹیکل 184(3) کی درخواست کے ذریعے رجوع کرلیا گیاہے ۔درخواست سپریم کورٹ بار ایسوسیشن کی جانب سے درخواست گزار صدر سپریم کورٹ بار ایسوسیشن امان اللہ کنرانی کے ذریعے ان کے وکلاءکے پینل میں شامل سابق صدر سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن و ممبر پاکستان بار کونسل رشید اے رضوی نے گزشتہ روز جمعہ 16 اگست کو سپریم کورٹ کے پرنسپل بنچ میں داخل کردی ہے اس درخواست میں سپریم جوڈیشل کونسل کی کاروائی کو روکنے اور ریفرنس کو کالعدم کرنے کی استدعا کی گئی ہے اس درخواست کی پیروی سپریم کورٹ بارایسویشن کے سابق صدور حامد خان،علی احمد کرد، قاضی محمد انور ،کامران مرتضی اور رشید اے رضوی کرینگے۔

جسٹس فائز عیسیٰ ریفرنس

مزید : صفحہ آخر


loading...