گیس سے بجلی پیدا کرنیوالے صنعتی یونٹس ٹیرف کے حوالے سے اوگرا کی نظر ثانی اپیلیں مسترد

   گیس سے بجلی پیدا کرنیوالے صنعتی یونٹس ٹیرف کے حوالے سے اوگرا کی نظر ثانی ...

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس آصف سعید خان کھوسہ ،مسٹر جسٹس اعجاز الاحسن اور مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے گیس سے بجلی پیدا کرنے والے صنعتی یونٹس کے ٹیرف کے حوالے سے اوگرا کی نظر ثانی کی اپیلیں مستردکرتے ہوئے عدالتی فیصلے کی وضاحت جاری کی ہے کہ زیرنظر ٹیرف کا اطلاق اپنے استعمال کے لئے گیس سے بجلی پیدا کرنے والے صنعتی اداروں اورصنعتی یونٹس پر ہو گا۔ جن صنعتی اداروں نے گیس سے بجلی کی پیداوار کا لائسنس لے رکھا ہے، وہ بجلی پیدا کریں، نہ کریں یا اضافی بجلی فروخت کریں ان پرمستقبل میں یکساں ریٹس کا اطلاق ہوگا، مستقبل میں ٹیرف بڑھنے یا کم ہونے سے اس کیٹیگری پر کوئی اثر نہیں پڑے گا،گیس سے بجلی پیداکرنے اوراضافی بجلی فروخت کرنے والے لائسنس یافتہ صنعتی ادارے مقرر کردہ ٹیرف پرہی بل ادا کریں گے،مستقبل میں ایسی کیٹیگری کے صنعتی یونٹس پر وفاقی حکومت کے مقرر کردہ ٹیرف کا ہی اطلاق ہو گا۔اوگرا کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ گیس سے بجلی پیدا کرنے والی صنعتیں اور بجلی کی فروخت کا لائسنس لینے والے صنعتی اداروں کے ٹیرف ریٹس کے تعین پر نظرثانی کی جائے، عدالت نے اپنے فیصلے کی وضاحت کرتے ہوئے اوگرا کی اپیل مسترد کردی۔

اوگرا اپیل مسترد

مزید :

صفحہ آخر -