سولڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ کی کارکردگی پر مختلف پلیٹ فارمز پر تحفظات ہیں: ناصر شاہ 

سولڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ کی کارکردگی پر مختلف پلیٹ فارمز پر تحفظات ہیں: ناصر ...

  

کراچی (اسٹا ف رپورٹر)وزیر بلدیات سندھ سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ کراچی میں عید الاضحیٰ کے بعد آلائشوں کو اٹھانے اور صفائی ستھرائی کے کاموں میں سندھ سولڈ ویسٹ مینجمنٹ کی کارکردگی کسی حد تک بہتر رہی ہے تاہم کئی مقامات سے ابھی تک آلائشوں اور جانوروں کے باقیات نہ اٹھانے کی شکایات ہیں، جن کا ازالہ کرکے رپورٹ 24 گھنٹوں میں انہیں پیش کی جائے۔ سندھ سولڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ کی مجموعی کارکردگی کے حوالے سے مختلف پلیٹ فارمز پر تحفظات ہیں اس لئے سیکرٹری بلدیات کی سربراہی میں ایک تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دی گئی ہے، جو تمام مسائل اور معاملات کی تحقیقات کرکے اس کی رپورٹ 7 روز میں پیش کرے گی۔ وفاقی وزیر کی جانب سے چلائی جانے والی کلین کراچی مہم میں کچرہ لینڈ فل سائیڈ کی بجائے مختلف ندیوں اور گاربیج اسٹیشن پر ڈالنے کی وجہ سے مشکلات کا سامنا ہے اور اس سلسلے میں ایف ڈبلیو او کے نمائندوں کو بھی اس کی مانٹرنگ کو یقینی بنانا ہوگا کہ جو کچرہ اس مہم کے تحت اور نالوں کی صفائی کے دوران نکالا جارہا ہے اس کو لینڈ فل سائیڈ تک پہنچایا جائے۔ پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت کراچی میں کچرے سے بجلی کی پیداوار اور پہلے مرحلے میں 50 میگاواٹ بجلی کی پیداوار کے حوالے سے سندھ سولڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ اور پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ مکمل فزیبلٹی رپورٹ مرتب کرکے ایک ہفتہ میں پیش کرے تاکہ اس کو سندھ کابینہ اور ضرورت پڑنے پر سندھ اسمبلی سے منظور کروایا جاسکے اور کچرے کے لاکھوں ٹن ڈھیر جو اس وقت بھی جام چاکرو اور گوند پاس کی دو لینڈ سائیڈ پر موجود ہیں ان کو کارآمد بنایا جاسکے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کو اپنے دفتر میں دو مختلف اجلاسوں کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ پہلے اجلاس میں سیکرٹری بلدیات سندھ سید خالد حیدر شاہ، ایم ڈی سندھ سولڈ ویسٹ اے ڈی سنجنانی، تحریک انصاف سندھ کی رکن سندھ اسمبلی سدرہ عمران، ایف ڈبلیو او کے کرنل عاطف گلزار رانا، ایگزیٹو ڈائریکٹر (ایس ایس ڈبلیو ایم بی) نثار سومرو،  ڈپٹی کمشنر ایسٹ احمد علی صدیقی، ڈائریکٹر (ایس ایس ڈبلیو ایم بی) رحمت اللہ شیخ، ڈائریکٹر میڈیا (ایس ایس ڈبلیو ایم بی) میڈم الماس اور دیگر بھی موجود تھے۔ اس موقع پر ایم ڈی (ایس ایس ڈبلیو ایم بی) اے ڈی سنجنانی نے ادارے کی عید الضحٰی کے موقع پر عید کے تین یوم اور عید کے ایک دن بعد تک شہر بھر سے مجموعی طور پر 12 لاکھ سے زائد جانوروں کی آلائشوں کو ٹھکانے لگایا، جس کا وزن 53956 ٹن تھا۔ انہوں نے مزید بتایا کہ عید سے قبل ہی محکمہ کی جانب سے جام چاکرو اور گوند پاس پر دو ڈرینج جبکہ شرافی گوٹھ میں ایک ڈرینج ان آلائشوں کو دفن کرنے کی غرض سے بنالی گئی تھی۔ عید کے روز جام چاکرو پر 2567 ٹن، دوسرے روز 6639 ٹن، تیسرے روز 4323 ٹن جبکہ عید کے بعد چوتھے روز 1697 ٹن آلائشوں کو دفن کیا گیا، اسی طرح گوند پاس پر پہلے روز 4920 ٹن، دوسرے روز 8078 ٹن، تیسرے روز 7347 اورچوتھے روز 2607 ٹن آلائشوں کو دفن کیا گیا

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -