مرید عباس قتل کیس میں دہشت گردی کی دفعات شامل کرنے کی منظوری

مرید عباس قتل کیس میں دہشت گردی کی دفعات شامل کرنے کی منظوری

  

کراچی (اسٹا ف رپورٹر)اینکر مرید عباس سمیت 2 افراد کے قتل کے مقدمے میں پراسکیوشن نے دہشتگردی کی دفعات شامل کرنے کی منظوری دے دی۔ لنک جج نے مقدمے کا چالان لینے سے انکار کردیا۔کراچی سٹی کورٹ میں جوڈیشل مجسٹریٹ جنوبی کی عدالت میں اینکر مرید عباس سمیت 2 افراد قتل کیس کی سماعت ہوئی۔ اینکر مرید عباس سمیت 2 افراد کے قتل گ میں اہم پیشرفت سامنے آگئی۔ پراسکیوشن نے مقدمے میں دہشت گردی کی دفعات شامل کرنے کی منظوری دے دی۔ لنک جج نے مقدمہ کا چالان لینے سے انکار کردیا۔ عدالت نے ریماکس دیئے چالان متعلقہ کورٹ میں پیش کیا جائے۔ مذکورہ کیس کے فاضل جج عبدالرقیب تنیو کی رخصت پر ہیں۔ چالان کے مطابق مقدمے میں 4 عینی گواہوں کے ساتھ 35 گواہ شامل ہیں۔ ملزم عاطف زمان نے 4 گولیاں مرید عباس اور 3 خضر حیات پر چلائیں۔ ملزم سے برآمد ہونے والا اسلحہ اور جائے وقوعہ سے برآمد ہونے والے خول میچ کرگئے۔ ملزم نے منصوبہ بندی کے تحت مرید عباس اور خضر حیات کا قتل کیا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -