کراچی کیلئے مانگا گیا چندہ میرے اکاؤنٹ میں نہیں جاتا: سید علی زیدی

      کراچی کیلئے مانگا گیا چندہ میرے اکاؤنٹ میں نہیں جاتا: سید علی زیدی

  

کراچی (اسٹا ف رپورٹر)وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی نے کہا ہے کہ کہیں کسی کو کچرا پھینکتے دیکھیں تو تصویر کھینچ ہمیں بھیجیں ہم ان کے خلاف کارروائی کریں گے، بارشوں کے بعد پانی کافی حد تک نکل گیا ہے پلاسٹک بیگز کے خاتمے کا کام اچھا ہے مگر اکتوبر سے نہیں آج سے شروع ہونا چاہیئے۔انہوں نے کہاکہ جہاں جہاں کچرا ملے گا ہم اٹھاتے جائیں گے، لیاری کو صاف ستھرا بنا دیں گے،کراچی کو اکیلا کوئی صاف نہیں کرسکتا،سب ملکر کراچی کو صاف کرینگے،ایم کیو ایم جب دہشت گردی کرتی تھی تو دہشگرد کہا،فروغ نسیم کسی کی نظرمیں دہشت گرد ہے تو ان پرمقدمہ کرادیں ہمیں ان میں کوئی ایسی چیزنظرنہیں آئی۔وہ جمعہ کو لیاری میں کراچی صفائی مہم کے سلسلے میں پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے۔ اس موقع پرتحریک انصاف کے ارکان قومی وصوبائی اسمبلی بھی موجود تھے۔ وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی کا کہنا ہے کہ نالوں کی صفائی سے کافی حد تک بہتری آئی ہے، بارشوں کے بعد پانی کافی حد تک نکل گیا، کچھ جگہوں پر تھوڑا بہت پانی ہوگا وہ بھی نکالا جا رہا ہے۔ عوام سے بھی تعاون کرنے کی گزارش کرتے ہیں۔انہوں نے لوگوں سے درخواست کی کہیں کسی کو کچرا پھینکتے دیکھیں تو تصویر کھینچ کر وائرل کریں، تصاویر ہمیں بھی بھیجیں ہم ان کے خلاف کارروائی کریں گے،انہوں نے سندھ کے وزیربلدیات ناصر حسین شاہ کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاکہ انہوں نے مکمل تعاون کی یقین دہانی کروائی ہے آپ کے تعاون سے ہمارا کام آسان ہوگا،مئیر صاحب نے بھی کام شروع کردیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ضلع وسطی کے میدان میں کچرا اکھٹا کیا تو کچھ لوگوں کو تکلیف ہوئی،پہلے وہاں دہشتگرد تنظیم کے دفاتر تھے تو کوئی اعتراض نہیں تھا۔وفاقی وزیرکا کہنا تھا کہ کلین کراچی مہم میں اب مشینری کی تعداد بڑھا رہے ہیں جہاں جہاں کچرا ملے گا اٹھاتے رہیں گے فیڈرل حکومت کے تین اداروں پی این ایس سی، کے پی ٹی اور پی کیو اے  کا بلا واسطہ تعلق کراچی سے ہے کراچی کے لئے مانگا گیا چندہ میرے اکاؤنٹ میں نہیں جاتا، بندوق کے زور پر پیسے نہیں مانگے جو دینا چاہے دے نہ دینا چاہے نہ دے اگلے ہفتے اکاؤنٹ کی تفصیلات سوشل میڈیا پر جاری کردیں گے فاروق ستار جو چندہ لیتے تھے وہ لندن جاتا تھا۔ انہوں نے کہاکہ مراد علی شاہ کا شکر گزار ہوں جنہوں نے پلاسٹک بیگز پر پابندی لگائی  اس کے لئے اکتوبر کا انتظار نہ کریں فوری عملدرآمد کرائیں،ہمارا کام صفائی مہم شروع کرنا تھا اب دعا ہے کہ سب مل کر کراچی صاف کریں،ہم کامیاب ہوگئے تو عوام کو ایک چمکتا دمکتا کراچی مل جائے گا تحریک انصاف کے تمام ارکان قومی و صوبائی اسمبلی کا بھی شکر گزار ہوں جنہوں نے صفائی مہم میں تعاون کیا ہے۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ سوشل میڈیا پر وائرل فوٹیج میرے خلاف پروپیگنڈا ہے، خیابان شجاعت پر فینسی گاڑیاں کھڑی کر کے روڈ بند کیا گیا تھا،میں کے پی ٹی کی پرچم کشائی کی تقریب میں جا رہا تھا یہ کونسی سنت ابراہیمی ہے کہ پہلے قربانی جانوروں کی نمائش کی جائے پھرسڑک پرفینسی گاڑیاں کھڑی کرکے اسے آمدورفت کے لیے بند کردیا جائے۔چودہ اگست کو کچھ لوگ ڈیفنس کے علاقے میں دونوں جانب سڑک بند کرکے قربانی کر رہے تھے میں وہاں سے گزرا تو مجھے غصہ آیا جس کی ویڈیو وائرل ہوئی اس شہر میں اب قانون کی بالادستی ہے قانون سب کے لئے برابر ہے اور اب ہر شخص قانون کی پکڑ میں آئے گا،کامران ٹیسوری سڑکیں بند کرکے سنت ابراہیمی کی ادائیگی کر رہے تھے، پولیس بھی ساتھ موجود تھی۔انہوں نے کہا کہ جہاں جہاں کچرا ملے گا ہم اٹھاتے جائیں گے، لیاری کو صاف ستھرا بنا دیں گے۔ لیاری میں کم مشینری لگی ہے لیکن کام ہوتا رہے گا، تنقید کی جا رہی ہے کہ لیٹس کلین کراچی مہم کے لیے پیسے مانگ رہا ہوں، ہم نے صفائی مہم کے لیے الگ سے اکانٹ کھولا ہے۔ سندھ حکومت نے بھی کام کا آغاز کر دیا ہے۔پہلے 50، 60 ملی میٹربارش میں چندریگر روڈ، سعدی ٹاؤن، محمود آباد اور گجر نالے کی آبادیاں ڈوب جاتی تھیں،نالوں کی صفائی کے بعد اب یہ علاقے نہیں ڈوبے،کبھی کسی نے سوال پوچھا کہ اس دفعہ شہرکیمختلف علاقے کیوں نہیں ڈوبے میں کراچی کے عوام کی مدد چاہتا ہوں،نیم اینڈ شیم کے نام سے مہم کے دوسرے مرحلے کا آغاز کر رہے ہیں وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ مجھے وزیر اعظم کی ہدایات تھیں کراچی صاف کرنا ہے، میڈیا والوں سے درخواست ہے اگر کہیں کچرا ہے تو بتا دیں۔ نالے صاف کرنا ہمارا کام نہیں تھا پھر بھی کراچی کے لیے کیا۔ میری ٹائم وزیر کا کام نہیں کہ نالے صاف کرے، ہم تو مدد کو آئے ہیں کہ کام تیز ہوجائے۔انہوں نے کہاکہ بڑی بڑی صنعتوں میں ٹریٹمنٹ پلانٹ نہیں لگے ہیں ہم بتائینگیکہ کون کراچی میں کچرا کون پھیلاتاہے۔ انہوں نے کہاکہ جب ایم کیوایم جب دہشتگردی کرتی تھی تو اسے دہشتگرد کہا فاروق ستار اب ایم کیوایم پاکستان میں نہیں رہے،فروغ نسیم کوئی  دہشتگرد کہتے ہیں تو ان پر مقدمہ کرادیں،اب اس شہر میں کوئی دہشتگردی نہیں ہوتی۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ کراچی میں کچرا سترہ سال سیپڑا ہواہے 

مزید :

صفحہ اول -