ہنگو،نماز جمعہ میں علماء کرام نے کشمیر کے موضوع پر اظہار خیال کیا

ہنگو،نماز جمعہ میں علماء کرام نے کشمیر کے موضوع پر اظہار خیال کیا

ہنگو (بیورورپورٹ)ہنگوضلع بھر کے مختلف مساجدوں اورامام بارگاہوں میں نماز جمعہ تقاریر کے دوران علماء کرام کاکشمیر کے موضوع پر خصوصی بیانات کئے گئے، علماء کرام نے کشمیریوں کے ساتھ جانی و مالی امداد کرنے پر زور دیا، مظلوم کشمیریوں کے لئے خصوصی دعائیں مانگی گئیں۔سابق ضلع ناظم مفتی عبید اللہ، مولانا عبد الجلیل، مفتی محمد یونس قاسمی، مولانا عطاء اللہ و دیگر علماء کرام نے کہا کہ کشمیریوں کی خودادریت کے لئے سلامتی کونسل منصفانہ فیصلے کی توقع رکھتے ہیں۔چونکہ بھارت ایک منظم سازش کے تحت مذموم عزائم کے تحت کشمیر کے نہتے مسلمانوں پر مظالم سے پورے خطے کاامن داو پر لگانے کے درپے ہے۔مختلف مساجد میں علماء کرام نے خطبات میں کہاکہ امت مسلمہ تکلیف کے اس گھڑی میں کشمیری مسلمانوں کیساتھ کھڑی ہے اور کسی قسم کی قر بانی سے دریغ نہیں کرینگے۔علماکرام نے کہاکہ کشمیر کے مسلمانوں کی حق خود ادریت اور مخصوص حیثیت خاتمے کے لئے اقوام متحدہ کی طلب شدہ سلامتی کونسل اجلاس سے توقع رکھتے ہیں کہ کشمیری مسلمانوں کی حقوق کے لئے عملی اقدام اٹھائے گے۔مفتی عبید اللہ،مولانا عبدالجلیل،مفتی یونس،مولانا عطاء اللہ نے اور دیگر علما ء کرام نے اپنے خطبات میں کہاکہ بھاری ظلم بربریت کی انتہاء کردی نماز اور عید الضحی نماز اور قربانی تک بھی نہیں کرنے دی گئی۔انہوں نے کہاکہ کشمیر میں حاملہ خواتین کو ہسپتال تک اجازت نہیں دینا بھارتی غنڈہ گردی کھلا ثبوت ہے۔انہوں نے کہاکہ کشمیر ی مسلمان گزشتہ 50 سالوں سے اپنے حقوق کے حصو ل کے لئے قر بانیاں دے رہی ہے۔اسکے باوجود بھی مودی سرکار انسانی حقوق روند کر کشمیر کی خصوص حیثیت ختم کر کے کشمیری بھائیوں کی حقوق عضب کئے گئے انہوں نے بھارت پر واضح کیا کہ پاکستانی عوام کشمیری مسلمانوں کے ساتھ جانی مالی ہرقسم تعاون کئے تیار ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...