صوابی میں مختلف واقعات کے دوران 3افراد جاں بحق، 2زخمی

  صوابی میں مختلف واقعات کے دوران 3افراد جاں بحق، 2زخمی

  

 صوابی(بیورورپورٹ)ضلع صوابی میں دریائے سندھ میں نہانے اور ٹریفک حادثے میں تیراکی کے ماہر مولانا قاری محمد یاسین سمیت تین افراد جاں بحق جب کہ دو زخمی ہو گئے پولیس تھانہ صوابی کی رپورٹ کے مطابق گذشتہ رات صوابی ٹوپی روڈ پر بام خیل کے مقام پر دو موٹر سائیکل آپس میں ٹکرانے سے عبید اللہ سکنہ لالو ڈھیری موقع پر جاں بحق جب کہ ان کے ساتھی سمیت دو افراد شدیدز خمی ہو گئے۔ جنہیں پشاور ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔ دریں اثناء واپڈا سب ڈویژن حضرو اٹک کے علی بہادرکا نوجوان بیٹا دریائے سندھ میں نہانے کے دوران ڈوب کر جاں بحق ہو گیا مقامی غوطہ خوروں نے لاش کو نکال لیا اسی طرح موضع تورڈھیر کے مولانا قاری محمد یاسین گذشتہ روز پرانے اٹک پل کے مقام پر دریائے سندھ میں نہانے کے دوران لاپتہ ہو گیا بتایا گیا ہے کہ ان کو موقع پر موجود لوگوں نے حد نگاہ تیرتے ہوئے دیکھ لیا لیکن پانی کے تیز و تند بہاؤ کی وجہ سے وہ کنارے پر آنے میں ناکام نظر آرہے تھے مولانا قاری یاسین تیراکی کے انتہائی ماہر تھے علاقے کے لوگ اور مقامی غوطہ خور ان کی تلاش میں جدوجہد کر رہے ہیں یہ معلوم نہیں کہ وہ دریائے سند ھ میں ڈوب چکا ہے یا کافی دور زندہ نکل چکا ہے تاہم ان کی تلاش جاری ہے #

مزید :

پشاورصفحہ آخر -