نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد  کے حوالے سے حکومتی رپورٹ جاری

نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد  کے حوالے سے حکومتی رپورٹ جاری
نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد  کے حوالے سے حکومتی رپورٹ جاری

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن  لائن)نیشنل ایکشن پلان پرعملدرآمد  کے حوالے سے حکومتی رپورٹ جاری کردی گئی ہے،فرقہ وارنہ دہشت گردی کے واقعات میں نمایاں کمی آئی ،کراچی میں امن و امان کی صورتحال میں نمایاں بہتری آئی۔

سرکاری رپورٹ کے مطابق پنجاب میں امن و امان میں بہتری لیکن انتہاپسندی میں اضافہ کے رجحان کی نشاندہی ہوئی ہے ۔71 تنظیموں کو کالعدم قرار دیا گیا ،چار نگرانی کی فہرست میں شامل ہیں ۔ دستیاب دستاویز کے مطابق ساڑھے تیس ہزار مدارس میں سے 21ہزار 9سو کی رجسٹریشن کرلی گئی ہے۔سندھ کے 80 فی صد، کے پی کے 75 فیصد،بلوچستان کے 60 اور فاٹا کے 85 فی صد مدارس رجسٹرڈ کر لئے گیے ہیں۔ نو کروڑ 81 لاکھ غیر قانونی سمز بلاک کر دی گئیں۔نیشنل ایکشن پلان  کےتحت  اے پی ایس سانحہ کے بعد 486 افراد کو سزائیں دی گئیں جبکہ 56 دہشت گردوں کو پھانسی کی سزا دی گئی۔رپورٹ کےمطابق دہشت گردوں کے خلاف 2 لاکھ 49 ہزار 909 آپریشنز کئے گیے۔3 ہزار 8سو دہشت گرد گرفتار جبکہ  2 ہزار 268 مارے گئے۔  نفرت پھیلانے پر ساڑھے تین ہزار افراد گرفتار کئے گئے۔لاؤڈ سپیکر ایکٹ کی خلاف ورزی پر 34 ہزار سے زائد گرفتاریاں ہوئیں۔ سوشل میڈیا پر سولہ سو لنکس بلاک اور  ساڑھے چودہ ہزار شکایات بھیجی گئیں۔رواں سال کراچی میں دہشت گردی کے 55 واقعات ہوئے۔کراچی میں 290 ٹارگٹ کلنگز ہوئیں۔ اغوا کے 503 کیسز رجسٹرڈ ہوئے۔ بلوچستان میں دو ہزار فرار یوں نے سرینڈرکیا۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد


loading...