’ہم بہت جلد شہباز شریف کو جواب دیں گے، پاکستانی اپوزیشن لیڈر برطانوی عدالت نہیں جائے گا کیونکہ ۔۔۔ ‘ سابق وزیر اعلیٰ پر زلزلہ زدگان کی امداد ہڑپ کرنے کا الزام لگانے والا صحافی ایک بار پھر میدان میں آگیا

’ہم بہت جلد شہباز شریف کو جواب دیں گے، پاکستانی اپوزیشن لیڈر برطانوی عدالت ...
’ہم بہت جلد شہباز شریف کو جواب دیں گے، پاکستانی اپوزیشن لیڈر برطانوی عدالت نہیں جائے گا کیونکہ ۔۔۔ ‘ سابق وزیر اعلیٰ پر زلزلہ زدگان کی امداد ہڑپ کرنے کا الزام لگانے والا صحافی ایک بار پھر میدان میں آگیا

  


لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) اپوزیشن لیڈر شہباز شریف پر زلزلہ زدگان کی امداد ہڑپ کرنے کا الزام عائد کرنے والے صحافی ڈیوڈ روز کا کہنا ہے کہ وہ چھٹیوں پر تھے جس کے باعث شہباز شریف کے وکیل کو جواب نہیں دیا جاسکا۔

شہباز شریف کے خلاف خبر دینے والے برطانوی صحافی ڈیوڈ روز نے پاکستانی صحافیوں کو مخاطب کرکے کہا کہ ڈیلی میل نے اس وجہ سے شہباز شریف کے وکیل کوجواب نہیں دیا ہے کیونکہ میں چھٹیوں سے ابھی واپس آیا ہوں۔ ’ ہم بہت جلد جواب دیں گے اور میں یقین دلاتا ہوں کہ میرا آرٹیکل پلانٹڈ نہیں تھا اور نہ ہم اس بات کو تسلیم کرنے کو تیار ہیں۔‘

ڈیوڈ روز نے ایک اور ٹویٹ میں کہا کہ اگر شہباز شریف واقعی انہیں اور ڈیلی میل کے خلاف ہرجانے کا دعویٰ دائر کرتے تو انہیں ان کی بیوی اور بچوں کو عدالت میں یہ وضاحت پیش کرنی پڑتی کہ وہ ایسے لوگوں سے جن کے پاس کچھ بھی نہیں تھا ، کیسے نقد سرمایہ کاری کراتے رہے ہیں۔ ’ ہوسکتا ہے کہ وہ یہ وضاحت کردیں ، ہمیں انتظار کرنا چاہیے۔‘

ڈیوڈ روز نے کہا کہ انہوں نے گزشتہ سال بھی شریف فیملی کے ایک اور شخص کی غیر ظاہر شدہ دولت کے بارے میں لکھا تھا۔ ’ کیا کوئی مجھے اس کا موجودہ پتہ بتاسکتا ہے، میرا نہیں خیال کہ یہ پارک لین یا مے فیئر میں ہے، کیا اس کی بیٹی کو کچھ مسائل کا سامنا تو نہیں ہے؟‘۔

خیال رہے کہ ڈیوڈ روز نے ڈیلی میل کیلئے دی گئی اپنی ایک سٹوری میں دعویٰ کیا تھا کہ شہباز شریف نے پاکستان کے زلزلہ زدگان کیلئے برطانیہ سے آنے والی امداد کی رقم ہڑپ کرلی تھی۔ یہ خبر سامنے آنے کے بعد شہباز شریف نے صحافی اور اخبار کے خلاف برطانیہ میں ہرجانے کا دعویٰ دائر کرنے کا اعلان کیا تھا لیکن بعد میں پتہ چلا تھا کہ شہباز شریف نے عدالت سے رجوع نہیں کیا بلکہ اخبار سے اس کی خبر پر وضاحت طلب کی ہے۔

مزید : برطانیہ /سیاست


loading...