بابائے اردو مولوی عبدالحق ایک عہد ساز شخصیت تھے، ڈپٹی میئر کراچی 

 بابائے اردو مولوی عبدالحق ایک عہد ساز شخصیت تھے، ڈپٹی میئر کراچی 

  

 کراچی (اسٹاف رپورٹر) ڈپٹی میئر کراچی سید ارشد حسن نے کہا ہے کہ بابائے اردو مولوی عبدالحق ایک عہد ساز شخصیت تھے جنہوں نے اردو زبان کی ترویج واشاعت کے لئے بے مثال خدمات انجام دیں، زندہ قومیں اپنی تہذیب و روایات کو زندہ رکھتی ہیں،یہ مقصد اس وقت پورا ہوسکتا ہے جب ہر شخص اپنی بساط کے مطابق اس میں حصہ لے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے بابائے اردو مولوی عبدالحق کی 59 ویں برسی کے موقع پر کراچی کے شہریوں کی جانب سے ان کے مزار پر پھولوں چڑھانے اور فاتحہ خوانی کے بعد گفتگو کرتے ہوئے کہی، اس موقع پر شیخ الجامعہ وفاقی اردو یونیورسٹی ڈاکٹر عارف زبیر، رجسٹرار ڈاکٹر ساجدجہانگیر، ڈائریکٹر میڈیا مینجمنٹ کے ایم سی علی حسن ساجد، ڈائریکٹر کلچر شمس مسعودی، ڈاکٹر رضوانہ جبیں، محترمہ افشاں بروہی اور بلدیہ عظمیٰ کراچی کے دیگر افسران بھی ان کے ہمراہ تھے، ڈپٹی میئر کراچی نے کہا کہ اردو زبان پوری دنیا میں رابطے کا موثر کام سرانجام دے رہی ہے اور ہمارے صوبوں اور شہروں کے درمیان باہمی روابط کے لئے اردو ہی موثر ذریعہ ہے، انہوں نے کہا کہ اردو زبان دنیا کی تیسری بڑی زبان ہے اور اس پر دنیا بھر کی یونیورسٹیوں اور تحقیقی اداروں میں کام جاری ہے، علم و ادب میں اردو زبان عروج حاصل کررہی ہے،  اردو زبان کی ترویج کے لئے جامعہ اردو کا قیام بابائے اردو کی کوششوں کا نتیجہ ہے، جس کے ذریعہ اعلیٰ تعلیم اردو میں دی جاتی ہے، ڈپٹی میئرکراچی نے کہا کہ بابائے اردو مولوی عبدالحق نے اردو زبان کو ہماری قومیت کی نشانی، اسلاف کی یادگار اور ہماری تہذیب و تمدن کی امین قرار دیا ہے مگر دہرے نظام تعلیم کے باعث ہم قومی زبان کو وہ مقام نہیں دے سکے جو اس کا حق تھا، اگر اردو کو ذریعہ تعلیم بنایا جاتا تو قومی ترقی میں بہتری آتی، انہوں نے کہا کہ ہمیں بابائے اردو مولوی عبدالحق کی برسی کے موقع پر آج یہ عہد کرنا چاہئے کہ ہم سب مل کر اردو زبان کے فروغ کے لئے اپنا اپنا کردار ادا کریں گے۔

مزید :

صفحہ آخر -