کوٹ سادات میں بدترین لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج ، کپتان کی حکمرانی میں زرداری دور کی یادیں تازہ ہوگئیں

کوٹ سادات میں بدترین لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج ، کپتان کی حکمرانی میں زرداری ...
کوٹ سادات میں بدترین لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج ، کپتان کی حکمرانی میں زرداری دور کی یادیں تازہ ہوگئیں

  

کوٹ سادات (ڈیلی پاکستان آن لائن) 2008 سے 2013 کے پیپلز پارٹی کے دور حکومت میں پاکستان میں بدترین لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج نے عوام کا جینا دوبھر کیے رکھا۔ 2013 سے 2018 کے مسلم لیگ ن کے دور حکومت میں توانائی بحران پر قابو پا کر نہ صرف لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ کردیا گیا بلکہ کم وولٹیج پر بھی قابو پالیا گیا تھا تاہم موجودہ حکومت نے ایک بار پھر تاریخ دہرادی ہے۔

تحریک انصاف کی حکومت کے دوران عوام کو بدترین لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج کے مسئلے کا سامنا ہے۔ ضلع وہاڑی کے نواحی گاؤں کوٹ سادات جہاں سلدیرا فیڈر ساہوکا سے بجلی فراہم کی جاتی ہے، وہاں بدترین لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج نے شہریوں کی زندگی عذاب بنا کر رکھ دی ہے۔

کوٹ سادات میں نہ صرف کئی کئی گھنٹے لوڈ شیڈنگ کی جاتی ہے بلکہ پیپلز پارٹی کے دور کی طرح ہونے والی بار بار ٹرپنگ سے بھی شہریوں کو مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ 

اہل علاقہ کا کہنا ہے کہ آخر ایک بحران جو کہ ختم ہوچکا تھا ، اب دوبارہ سر کیوں اٹھا رہا ہے؟ وزیر اعظم عمران خان آئی پی پیز سے معاہدے کے ذریعے سستی اور بلا تعطل بجلی کی فراہمی کا دعویٰ تو کرتے ہیں لیکن حقیقت اس کے بالکل الٹ ہے۔

کوٹ سادات کے شہریوں نے واپڈا کے اعلیٰ حکام، وزارت توانائی کے وزیر عمر ایوب خان اور وزیر اعظم عمران خان سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ بجلی کے مسئلے کا مستقل حل نکالیں اور شہریوں کو ذہنی و نفسیاتی سکون مہیا کریں۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -وہاڑی -