12ویں جماعت کی طالبہ کواس کے باپ کے دوستوں نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا

 12ویں جماعت کی طالبہ کواس کے باپ کے دوستوں نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا
 12ویں جماعت کی طالبہ کواس کے باپ کے دوستوں نے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں باپ کے تین دوستوں نے 12ویں جماعت کی طالبہ کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔ انڈیا ٹوڈے کے مطابق یہ انسانیت سوز واردات ریاست کیرالہ کے ضلع تھریسر میں واقع گاﺅں پونائرکولم میں ہوئی۔ واقعے کے وقت لڑکی گھر میں اکیلی تھی جب اس کے باپ کے دوست آ گئے اور اسے ہوس کا نشانہ بناڈالا۔ 

ملزمان میں سے ایک شاجی نامی شخص کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے جبکہ دیگر دو ملزمان کو گرفتار کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ پولیس کے مطابق لڑکی کا باپ منشیات فروش تھا اور ملزمان نہ صرف اس کے دوست تھے بلکہ اس سے منشیات بھی خریدتے تھے۔ ان دنوں لڑکی کا باپ منشیات فروشی کے الزام میں ہی جیل میں ہے۔

پولیس کے مطابق لڑکی کی ماں نے اپنی بیٹی کے ساتھ ہونے والے جنسی زیادتی کے واقعے کو چھپانے کی کوشش کی، جس پر اس کے خلاف بھی قانونی کارروائی کی جا سکتی ہے۔ جب لڑکی نے اپنی ماں کو اس واقعے کے متعلق بتایا تو اس نے بیٹی کو چپ رہنے کو کہا اور ایف آئی آر درج کرانے سے انکار کر دیا۔ اگلے روز لڑکی نے اپنے ٹیچر کو اس واقعے کے متعلق بتایا جس نے پولیس کو مطلع کر دیا اور ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔

مزید :

بین الاقوامی -