نا معلوم افراد نے مسجد میں فائرنگ کرکے ڈی ایس پی کے بھائی کو قتل کر دیا

نا معلوم افراد نے مسجد میں فائرنگ کرکے ڈی ایس پی کے بھائی کو قتل کر دیا

  

لاہور(کرائم سیل) صو با ئی دا را لحکومت میں ٹا ر گٹ کلنگ ،سا بق ایس ایچ او گلشن راوی کا وا لد اور گورنر ہاوس میں تعینات ڈی ایس پی کے بھائی کو مسجد میں فجر کی اذا ن د یتے ہو ئے نا معلوم ا فرا د نے فا ئر نگ کر کے قتل کردیا اور موقع سے فرا ر ہو گئے، فائرنگ کی آواز سے علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا ، پو لیس نے نعش کو پو سٹ ما ر ٹم کے لئے مردہ خا نہ میں منتقل کر کے تفتیش کا آغازکردیا ہے ۔ تفصیلا ت کے مطا بق قلعہ گجر سنکھ مین بازار مکان نمبر46 کار ہا ئشی 8بچو ں کا با پ60سا لہ ملک محمد علی ،سا بق ایس ایچ او گلشن را وی ملک حسین کا وا لد اور ڈی ایس پی اعجاز ملک کا بھائی تھا ۔ پو لیس کے مطا بق گزشتہ روز جامعہ مسجد سبحانیہ رضویہ میں معمول کے مطابق فجر کی اذان دینے کے لیے گیا جہاں وہ اذان دے رہا تھا کہ اچانک نامعلوم افراد نے مسجد میں گھس کر اس پر فائرنگ کر دی جس کے نتیجہ میں وہ شدید زخمی ہو گیاجبکہ ملزمان فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔ محلہ دار اور امام مسجد سپیکر پر فائرنگ کی آواز سن کر مسجدمیں پہنچے تو دیکھا کہ محمد علی خون میں لت پت پڑا تھا، اید ھی والوں نے زخمی کو فوری طبی امداد کے لیے میو ہسپتال منتقل کیامگر وہ جانبر نہ ہو سکے ۔ وا قعہ کی اطلا ع ملتے ہی پولیس کی بھاری نفری پہنچ گئی جنہوں نے لاش کو قبضے میں لے کر پوسٹ ما رٹم کے لیے مردہ خانے منتقل کر دیا ۔پولیس کے مطابق مقتول کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ ان کی کسی سے دشمنی نہیں تھی ،مقتو ل عرصہ دراز سے مسجد میں اذان دے رہے تھے ا۔ن کا ایک بیٹا محمد حسین سا بق ایس ایچ او تھا ،ایک بیٹا ٹریفک وارڈن ، ایک بیٹا ایڈوکیٹ اور دو بیٹے گوجرانولہ میں اپنا کاروبار چلاتے ہیں ۔ اس حوا لے سے مقتو ل کے بھا ئی ڈی ایس پی ملک ا عجا ز نے نما ئند ہ ’’پاکستا نِِ سے گفتگو کر تے ہو ئے بتا یا کہ مقتول کی کسی سے کو ئی د شمنی نہیں ہے، نا معلوم ا فرا د نے ٹا ر گٹ کیا ہے ۔پو لیس نے نا معلو م ا فرا د کے خلا ف مقد مہ در ج کر کے تفتیش کا آغازکردیا ہے ۔

مزید :

علاقائی -