سانحہ پشاور ، منصوبہ افغانستان میں بنا، حملے کے لیے تین گروپوں کے گٹھ جوڑکا انکشاف

سانحہ پشاور ، منصوبہ افغانستان میں بنا، حملے کے لیے تین گروپوں کے گٹھ جوڑکا ...
سانحہ پشاور ، منصوبہ افغانستان میں بنا، حملے کے لیے تین گروپوں کے گٹھ جوڑکا انکشاف

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سانحہ پشاور سے متعلق تحقیقات کا دائرہ وسیع کردیاگیاہے اور ابتدائی تحقیقات میں انکشاف ہواکہ تین گروپوں نے مل کر حملہ کیا جبکہ اس کا منصوبہ افغانستان میں بنایاگیا۔

ڈان نیوزنے تحقیقاتی ذرائع کے حوالے سے بتایاکہ ازبک اسلامی موومنٹ انٹرنیشنل ، طالبان کے ولی گروپ اور بھارتی خفیہ ایجنسی ’را‘کے مقامی ایجنٹوں نے مل کر منصوبے پر عمل درآمد کرایااور مقامی لوگوں نے اُنہیں رائیکی و سہولت کار کے طورپر خدمات فراہم کیں۔ ابتدائی تحقیقات کے مطابق مارے جانیوالے افراد شکل وشباہت سے بھی ازبک لگتے تھے جبکہ ازبک اسلامک موومنٹ انٹرنیشنل کے رابطے القاعدہ اور طالبان سے بھی ہیں اوراُن کے کئی اہم رہنماء”ضرب عضب “ میں بھی مارے جاچکے ہیں ۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق دہشتگردوں کامنصوبہ لمبا تھا جن کے قبضے سے کھانے پینے کی اشیاءبھی برآمد ہوئی ہیں ۔

ذرائع نے بتایاکہ مارے جانیوالے افراد حملے کے دوران انگریزی اور عربی بول رہے تھے جس سے غیرملکی خفیہ ایجنسی سمیت کئی گروپوں کے ملوث ہونے کے شواہد پختہ ہوجاتے ہیں ۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -