طالبان اور پاکستان ایک ساتھ نہیں رہ سکتے: انسانی حقوق کمیشن

طالبان اور پاکستان ایک ساتھ نہیں رہ سکتے: انسانی حقوق کمیشن
طالبان اور پاکستان ایک ساتھ نہیں رہ سکتے: انسانی حقوق کمیشن

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) پاکستان کمیشن برائے انسانی حقوق نے پشاور میں سکول پر طالبان کے حملے میں بچوں کے قتل کو قومی سانحہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس قومی المیہ سے ان لوگوں کی آنکھیں کھل جانی چاہئیں جو اب بھی سمجھتے ہیں کہ طالبان اور پاکستان ایک ساتھ موجود رہ سکتے ہیں۔

اسلام آباد سے جاری بیان میں کمیشن نے کہا کہ ایچ آر سی پی کو پشاور کے آرمی پبلک سکول پر طالبان کے حملے میں عظیم جانی نقصان پر شدید صدمہ پہنچا ہے۔مذہب سمیت مسلح تصادم کے قواعد بچوں کو نشانہ بنانے کا کوئی جواز فراہم نہیں کرتے لیکن یہ کوئی راز نہیں رہا کہ قاتل اور انہیں سکول پر حملہ کرنے کیلئے بھیجنے والوں کے دلوں میں نہ تو مذہب کا احترام ہے اور نہ ہی وہ مہذب رویہ رکھنے والے لوگ ہیں۔ پاکستان کمیشن برائے انسانی حقوق اپنے اس یقین کا اعادہ کرتا ہے کہ طالبان اور پاکستان ایک ساتھ نہیں رہ سکتے۔ پشاور میں دہشتگردوںکے بدترین عمل نے ایک بار پھر ثابت کردیا ہے کہ جب تک طالبان کو مکمل طور پر شکست نہیں دیدی جاتی، پاکستان میں اس وقت تک امن قائم نہیں ہوسکتا۔

مزید :

اسلام آباد -