آرمی چیف کی افغان صدر اور ایساف کمانڈر سے ملاقات، دہشتگردوں کیخلاف مشترکہ کوششیں جاری رکھنے پر اتفاق

آرمی چیف کی افغان صدر اور ایساف کمانڈر سے ملاقات، دہشتگردوں کیخلاف مشترکہ ...
آرمی چیف کی افغان صدر اور ایساف کمانڈر سے ملاقات، دہشتگردوں کیخلاف مشترکہ کوششیں جاری رکھنے پر اتفاق
کیپشن: Army Chief

  

کابل (مانیٹرنگ ڈیسک) چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف نے افغان سرزمین پر دہشت گردوں کے ٹھکانے ختم کرنے کیلئے کارروائیاں کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے افغانستان کے صدر اشرف غنی اور ایساف کمانڈر سے ملاقاتیں کیں جس دوران پاک افغان سرحدی علاقوں میں سیکیورٹی معاملات پر بات چیت کی گئی۔ ذرائع کے مطابق آرمی چیف نے سانحہ پشاور سے متعلق افغان صدر سے اہم انٹیلی جنس معلومات کا تبادلہ کیا اور افغان سرزمین پر دہشت گردوں کے ٹھکانے ختم کرنے کیلئے کارروائیاں کرنے کا مطالبہ کیا۔ افغان صدر کا کہنا تھا کہ دہشت گرد پاکستان اور افغانستان دونوں ملکوں کے دشمن ہیں، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان سے بھرپور تعاون کیا جائے گا۔ پاک فوج کے تعلقات عامہ کے ادارے (آئی ایس پی آر) سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ افغانستان کے صدر اشرف غنی نے افغان سرزمین پاکستان کے خلاف استعمال نہ ہونے دینے کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ دہشت گردی کے خلاف مشترکہ کوششیں جاری رہیں گی ۔ ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی سے متعلق کسی بھی معلومات پر فوری کارروائی کی جائے گی۔ آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے افغان صدر کو یقین دہانی کرائی کہ پاکستان کی سرزمین بھی افغانستان کے خلاف استعمال نہیں ہونے دی جائے گی۔ آئی ایس پی آر کے اعلامیے کے مطابق ایساف کمانڈر جان کیمبل نے بھی دہشت گردوں کے خلاف کارروائیوں کی یقین دہانی کرائی اور کہا کہ اپنے علاقے میں دہشت گردوں کا خاتمہ کریں گے۔ آئی ایس پی آر کے بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ دہشت گرد جہاں جائیں گے، ان کا نام و نشان مٹا دیں گے۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -