قربانی، بہادری: خاتون پرنسپل نے بچوں کیلئے اپنی زندگی دیدی

قربانی، بہادری: خاتون پرنسپل نے بچوں کیلئے اپنی زندگی دیدی
قربانی، بہادری: خاتون پرنسپل نے بچوں کیلئے اپنی زندگی دیدی

  

پشاور (ویب ڈیسک) آرمی پبلک سکول کی پرنسپل طاہرہ قاضی نے جرا¿ت اور قربانی کی تاریخی رقم کرکے سکول کے معصوم بچوں کو اکیلا چھوڑ کر خود بحفاظت نکلنے سے انکار کردیا اور جان کا نذرانہ دے کر خود کو امر کردیا۔ عینی شاہد اور سیکیورٹی ذرائع کے مطابق فوجی کمانڈوز آپریشن کے دوران پرنسپل طاہرہ قاضی کو بحفاظت باہر نکالنے میں کامیاب ہوگئے تھے تاہم ان سے رہا نہ گیا اور کمروں میں موجود بچوں جو دہشتگردوں کے رحم و کرم پر تھے، کی فکر میں وہ اپنی فکر چھوڑ کر دوبارہ سکول کے اندر چلی گئیں۔ بعد میں ان کی جلی ہوئی لاش ملی جس کی گزشتہ رات تک شناخت بھی نہیں ہوپارہی تھی، اسی بناءپر ان کے بدقسمت خاندان کے افراد ان کو رات گئے تک تلاش کرتے رہے۔ ہسپتالوں اور سکول میں پڑی لاشوں میں ان کی لاش کو ان کے خاندان والوں نے ان کے زیورات سے پہچانا۔ پرنسپل طاہرہ قاضی گزشتہ پندرہ سال سے آرمی پبلک سکول و کالج میں خدمات سرانجام دے رہی تھیں۔ اس آسامی پر بحیثیت پرنسپل تعیناتی سے قبل وہ اسی سکول کی جونیئر ٹوڈلر برانچ کی بھی پرنسپل رہیں۔ لنڈی ارباب سے تعلق رکھنے والی اس خاتون کو پندرہ دسمبر 2012ءکو سابق کور کمانڈر پشاور لیفٹیننٹ(ر) خالد ربانی نے پرنسپل آف دی ایئر کے ایوارڈ سے بھی نوازا۔

مزید :

قومی -